وفاقی حکومت فوری طور پر منصوبہ خیبرپختونخوا کے بقایا جات ادا کرے ، میاں جمشید

وفاقی حکومت فوری طور پر منصوبہ خیبرپختونخوا کے بقایا جات ادا کرے ، میاں ...

پشاور( پاکستان نیوز)خیبر پختونخواکے وزیر برائے ایکسائز و ٹیکسیشن میاں جمشید الدین کاکا خیل نے نوشہرہ میں ایک کھلی کچہری کے دوران اپنے خطاب میں کہا ہے کہ وفاقی حکومت ظلم و ستم کی حد کررہی ہے اور ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت صوبے کے عوام کو سڑکوں پر احتجاج کیلئے نکلنے پر مجبور کیا جارہاہے حالانکہ وقت کا تقاضا ہے کہ وفاقی حکومت این ایف سی ایوارڈ کو فوری طور پر دہشت گردی سے متاثرہ صوبے کو دینے کا اعلان کرے تاکہ بجلی کے خالص منافع کے چار سو ارب روپے عوام کی بھلائی اورصوبے کی تعمیر و ترقی پر لگاکر صوبہ خیبر پختونخوا کو ایک ماڈل صوبہ بنایا جاسکے۔انہوں نے کہا کہ مزید ہمارے صبر کا امتحان لینا گناہ عظیم اور مجرمانہ اقدام ہو گا۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان تحریک انصاف ملک کا خزانہ لوٹنے والوں کا پیٹ چاک کرکے غریب عوام اور پسے ہوئے طبقات کے غصب شدہ حقوق دلاکردم لے گی۔صوبائی وزیر نے کہا کہ اس وقت پاکستان تحریک انصاف ملک میں تمام مفادپرست سیاسی جماعتوں کا مقابلہ تن تنہا کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ خطے میں امن سمیت پختون قوم کے حقوق کیلئے پاکستان تحریک انصاف کے قائدین عملی جدوجہد کررہے ہیں حالانکہ تبدیلی کے اس سفر میں عوام دشمن قوتیں ہماری ٹانگیں کھینچنے میں مصروف ہیں لیکن پاکستان کے غیور عوام ووٹ کے ذریعے انکا کڑا احتساب کرینگے۔

مزید : پشاورصفحہ اول