تالے توڑ کر د کانوں کو لوٹنے والے ڈاکو گرفتار کیے جائیں ،محمود حامد

تالے توڑ کر د کانوں کو لوٹنے والے ڈاکو گرفتار کیے جائیں ،محمود حامد

کراچی(اسٹاف رپورٹر) آل پاکستان آرگنائزیشن آف اسمال ٹریڈرز اینڈ کاٹیج انڈسٹریز کے صدر اور گلبرگ ٹاؤن ڈسٹرکٹ سینٹرل یوسی 33سے بلدیاتی امیدوار محمود حامد ،نائب صدور عثمان شریف ،عبد الماجد نے کراچی کی مارکیٹوں کی درجنوں دو کانوں کے تالے توڑ کر کیش اور مال لوٹنے کے واقعات پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ آپریشن کے بعد بھتہ خوری کی وارداتوں میں کمی آئی تھی مگر تاجروں کو لوٹنے کا نیا انداز انتہائی تشویش ناک ہے ۔تاجر راہنماؤں نے کہا کہ سالوں بعد مارکیٹوں میں بھتوں اور جبری چندوں میں کمی آئی تھی اور تاجروں نے سکون کا سانس لیا تھا مگر لوٹ مار کی نئی لہر نے تاجر وں کو پریشان کر دیا ہے ۔ تین روز قبل فیڈرل بی ایریا بلاک 14،تھانہ جو ہر آباد کے علاقے میں کمپیوٹر کی دوکان کے تالے توڑ کر کمپیو ٹر اور کیش لوٹ لیا گیا ۔ دو روز قبل لیاقت آباد سپر مارکیٹ ،نیرنگ مارکیٹ میں بھی د رجنوں دوکانوں کے تالے توڑ کر کیش لوٹ لیا گیا ۔لیاقت آباد میں رفیق آئل ڈپو کو لوٹا گیا اور پیر اور منگل کی درمیانی رات فردوس شاپنگ سینٹر میں جیولرز کی دو کانوں کے تالے توڑ کر کیش لوٹ لیا گیا ۔تاجر راہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ لوٹ مار کر نے والے مجرموں کو گرفتار کیا جائے اور لوٹا ہوا مال بر آمد کیا جائے ۔ کراچی میں دہشت گر دی ،بھتہ خوری کے خلاف جاری آپریشن کے دوران تاجروں کو دیدہ دلیری سے لوٹنے کی کاروائیاں آپریشن پر سوالیہ نشان ہیں ۔اس سلسلے میں مقامی پولیس بھی FIRکاٹنے میں ٹال مٹول سے کام لے رہی ہے جس کے باعث تاجروں میں سخت اضطراب و اشتعال پا یا جاتا ہے ۔ اسمال ٹریڈرز کے راہنماؤں نے کہا کہ اگر مجرمان کو گرفتار کر کے تاجروں کو تحفظ فراہم نہ کیا گیا تو تاجر احتجاج پر مجبور ہوں گے ۔

مزید : کراچی صفحہ آخر