سعودی بن لادن گروپ کا ایسا خطرناک فیصلہ کہ غیر ملکی ورکروں کی نیندیں اڑگئیں، بڑی پریشانی

سعودی بن لادن گروپ کا ایسا خطرناک فیصلہ کہ غیر ملکی ورکروں کی نیندیں اڑگئیں، ...
سعودی بن لادن گروپ کا ایسا خطرناک فیصلہ کہ غیر ملکی ورکروں کی نیندیں اڑگئیں، بڑی پریشانی

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں مسلسل کمی کے باعث سعودی عرب کے تعمیراتی شعبے میں روزگار محدود ہورہا ہے، لیکن سعودی بن لادن تعمیراتی کمپنی نے اس سلسلے میں بہت بڑا فیصلہ کرلیا ہے، جس کے نتیجے میں ہزاروں غیر ملکیوں کا روزگار بری طرح متاثر ہوگا۔

نیوز سائٹ عریبین بزنس ڈاٹ کام کے مطابق مشرق وسطیٰ کی سب سے بڑی تعمیراتی کمپنیوں میں شمار ہونے والی بن لادن کمپنی نے تقریباً 15 ہزار ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ نیوز سائٹ نے خبر رساں ایجنسیوں اور ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ فارغ کئے جانے والے 15ہزار ملازمین سے کچھ کا روزگار تو فوری طور پر ختم ہوجائے گا جبکہ کچھ کو عارضی طور پر جدہ میں جاری ایک ائیرپورٹ کے تعمیراتی پراجیکٹ پر منتقل کیا جائے گا۔

مزید جانئے: سعودی عرب میں نیا قانون، پہلی مرتبہ ایسی چیز پر ٹیکس لگادیا گیا جو پہلے کبھی نہ لگایا گیا

تجزیہ کاروں کے مطابق بن لادن کمپنی کا اقدام غیر ملکی ملازمین کے لئے خصوصاً تعمیراتی شعبے میں محدود ہوتے مواقع کی ایک مثال ہے اور اس شعبے میں دیگر کئی کمپنیاں بھی آنے والے دنوں میں ایسے ہی فیصلے کرنے پر مجبور ہوں گے۔ واضح رہے کہ مسجد الحرام میں کرین گرنے کا سانحہ پیش آنے کے بعد سعودی رائل کورٹ نے بن لادن گروپ کو نئے کنٹریکٹ دینے پر فی الحال پابندی عائد کر رکھی ہے، جو اس کے انتہائی بڑے حالیہ اقدام کی ایک وجہ قرار دی جارہی ہے۔

مزید : بین الاقوامی