’ساس برائے فروخت‘ بہو نے انٹرنیٹ پر اشتہار دے دیا اور پھر۔۔۔

’ساس برائے فروخت‘ بہو نے انٹرنیٹ پر اشتہار دے دیا اور پھر۔۔۔
’ساس برائے فروخت‘ بہو نے انٹرنیٹ پر اشتہار دے دیا اور پھر۔۔۔

  


لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ساس بہو کا جھگڑا تو دنیا بھر میں ہر گھر کی کہانی ہے مگر کسی بہو نے اپنی ساس سے تنگ آ کر ایسا اقدام نہ کیا ہو گا جیسا اس بہو نے کیا۔ہوا یوں کہ اس بہونے پرانی اشیاءکی خریدوفروخت اور تبادلہ کرنے کی ویب سائٹ Faida.comپر اپنی ساس کو فروخت کرنے کے لیے اشتہار دے دیا ہے۔ بہو نے اشتہار کی عبارت بھی انتہائی دلچسپ لکھی ہے۔ اس نے لکھا ہے کہ ”ایک ساس برائے فروخت ہے۔ اس کی عمر تقریبا 60سال ہے۔ اس کی آواز اتنی میٹھی ہے کہ تمام ہمسایوں کو قتل کرنے کے لیے کافی ہے۔ وہ کھانوں میں نقص نکالنے کی بھی ماہر ہے، آپ جتنا بھی اچھا کھانا بناتے ہوں لیکن اتنا اچھا نہیں بنا سکتے کہ وہ اس میں سے کیڑے نہ نکال سکے۔ وہ ایک بہت اچھی مشیر بھی ہے، وہ سمجھتی ہے کہ ہر دوسرے شخص میں بہتری کی گنجائش ہمیشہ موجود رہتی ہے۔“

مزید جانئے: دنیا کی خطرناک ترین ساس، سرعام خاتون کا بھرکس نکال دیا کیونکہ۔۔۔

بہو نے اس اشتہار کا عنوان سب سے دلچسپ لکھا ہے کہ ”ایک ساس، بہترین حالت میں“(Mother in-law in Good condition)۔ آخر میں اس نے لکھا ہے کہ اگر کوئی میری ساس کو خریدنا نہیں چاہتا تو وہ محض ایک کتاب کے ساتھ اسے تبدیل کرکے بھی لیجا سکتا ہے۔ ویب سائٹ پر یہ پوسٹ اپ لوڈ ہونے کے 10منٹ بعد ہی ختم کر دی گئی لیکن اتنی ہی دیر میں یہ سوشل میڈیا پر بہت زیادہ پھیل گئی جہاں لوگ بہو کے اپنی ساس سے اس مزاحیہ انتقام سے لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ کچھ لوگ بہو کے روئیے پر تنقید بھی کر رہے ہیں۔ دوسری طرف قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ گھریلو جھگڑوں کو اس طرح انٹرنیٹ پر لانے پر اس خاتون کے خلاف قانونی کارروائی کی جا سکتی ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس