میرا گھر فضاﺅں میں ہے ،ایم ایم عالم جیسا ہیرو بننا چاہتی ہوں :مریم مختار کی والدہ سے آخری گفتگو

میرا گھر فضاﺅں میں ہے ،ایم ایم عالم جیسا ہیرو بننا چاہتی ہوں :مریم مختار کی ...
 میرا گھر فضاﺅں میں ہے ،ایم ایم عالم جیسا ہیرو بننا چاہتی ہوں :مریم مختار کی والدہ سے آخری گفتگو

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان کی شہید ہونے والی پہلی خاتون فائٹر پائلٹ مریم مختار کی والد ہ نے کہا ہے کہ مریم اپنے آپ کو شیر دل کہتی تھی اور وہ خواتین کے لیے رول ماڈل تھی ۔انہوں نے بتا یا کہ آخر ی بار مریم سے بات چیت کے دوران مریم مختار نے کہا کہ وہ کچھ ایسا کر جاﺅں کے مجھے اچھے الفاظ میں یاد کیا جائے ۔بات چیت کے دوران مریم مختار نے کہا کہ میر ا گھر فضاﺅںمیں ہے اور میں ایم ایم عالم جیسی ہیرو بننا چاہتی ہوں ۔مریم مختار کی والد ہ نے کہا کہ ان کی بیٹی کا حوصلہ بلند تھا لیکن اندر سے نہایت نرم گوشہ رکھتی تھیں ۔مریم تھوڑی جلدی ہم سے جدا ہو گئی ،اگر دو چار مشن کر جاتیں تو خوشی اور بھی زیادہ ہوتی ۔ دنیا نیوز کے پروگرام ”دنیا کامران خان کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے مریم کی والدہ نے بتا یا کہ مریم مختار کا مشن ہی ائیر فورس میں شمولیت تھی ،مریم کی اکیڈمی گھر تھا اور گھر انسٹی ٹیوشن تھا ۔اس موقع پر مریم مختار کے والد نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مریم سے آخر روز پیر کی رات بات ہوئی تھی جس میں مریم نے خوشخبری سنائی تھی کہ فائٹر پائلٹ بن گئی ہوں ۔انہوں نے بتا یا کہ مریم اکثر کہا کرتی تھی کہ جب جہاز کریش ہوتا ہے تو صرف راکھ ہی ملتی ہے،بیٹی کے منہ سے یہ بات سن کرلگتا تھا کہ وہ اندر سے کمزور ہو گی لیکن اس بات کے باوجود مریم نے فائٹر پائلٹ بننے کے لیے کوششیں جاری رکھیں اور اپنا خواب پورا کیا جس سے پتہ چلتا ہے کہ مریم اندر سے بہت زیادہ مضبوط خاتون تھی ۔

مزید : قومی