ڈاکٹر عاصم کیخلاف نارتھ ناظم آباد تھانے میں مقدمہ درج ،دہشتگردی کی دفعات شامل

ڈاکٹر عاصم کیخلاف نارتھ ناظم آباد تھانے میں مقدمہ درج ،دہشتگردی کی دفعات ...
ڈاکٹر عاصم کیخلاف نارتھ ناظم آباد تھانے میں مقدمہ درج ،دہشتگردی کی دفعات شامل

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر عاصم کیخلاف نارتھ ناظم آباد میں رینجرز کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا گیاہے جس میں دہشتگردی کی دفعات شامل کی گئیں ہیں ۔

نجی ٹی وی چینل دنیا نیوزکے مطابق مقدمے کے متن میں کہا گیاہے کہ ڈاکٹر عاصم نے کلفٹن میں واقع ہسپتال میں گینگ وار ،کالعدم اور جہادی تنظیموں کے ملزمان کا اعلاج کیا۔ایف آئی آر کے متن میں کہاگیاہے کہ ڈاکٹر عاصم نے متحدہ کے رہنما روف صدیقی،وسیم اختر ,سلیم شہزاد اور انیس قائمخانی کے کہنے پر علاج کرتے تھے جبکہ پیپلز پارٹی کے رہنما قادر پٹیل بھی دہشتگردوں کے علاج کیلئے ٹیلفون کیا کرتے تھے ۔ایف آئی آر میں کہاگیاہے کہ ڈاکٹر عاصم نے اپنے ہسپتالوں میں اشتہاریوں کو پناہ دی ،اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے پی ایس اور ایس ایس جی سی میں بھرتیاں کیں اور بڑے پیمانے پر گھپلے بھی کیئے ۔ایف آئی آر کے مطابق ڈاکٹر عاصم نے اپنے من پسند افراد کو ٹھیکے دلوائے اور رشوت لے کر بڑے پیمانے پر لوگوں کو تعینات بھی کیا ۔

مزید : کراچی /اہم خبریں