حکومت کے خاتمے کے بغیر چین سے بیٹھیں گے، شاہی سید

حکومت کے خاتمے کے بغیر چین سے بیٹھیں گے، شاہی سید

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی تھنک ٹینک کا اجلاس صوبائی صدر شاہی سید کی زیر صدارت مردان ہاؤس میں منعقد ہوا، اجلاس میں ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال اور مشترکہ اپوزیشن کی حکومت مخالف تحریک پر تفصیلی بحث ہوئی اور ملک کی موجودہ معاشی صورتحال جس میں مہنگائی، بے روزگاری، بجلی اور گیس کی قیمتوں میں اضافے کے پیش نظر غریب آدمی پر ہونے والے اثرات سمیت مختلف مسائل کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔اجلاس کے اختتام کے بعد صوبائی صدر شاہی سید نے پریس کانفرس کی شاہی سید نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ تبدیلی سرکار نے پانچ سالوں میں ایک کروڑ نوکریاں اور پچاس لاکھ گھر دینے کا وعدہ کیا، آج موجودہ حکومت کو ڈیڑھ سال کا عرصہ ہوچکا ہے روزگاراور گھر تو دینا دور کی بات موجودہ حکومت نے عوام کو بے روزگار اور غریبوں کو بے گھر کردیا ہے، مہنگائی کے اس ہوشربا اضافے کے پیش نظربے روزگار اور تعلیم یافتہ نوجوان بدترین حالات کا شکار ہیں،جو لوگ عرصہ دراز سے ریڑھیوں اور دکانوں پر کاروبار کررہے تھے ان پر ناجائز قابضین کا الزام لگا کر انھیں بے روزگار کردیا گیاہے،پاکستان میں اس وقت مہنگائی نے وہ ظلم ڈھائے ہیں کہ اس کے اثرات نسل در نسل دیکھے جائیں گے،روزانہ کی بنیاد پر کمانے والے مزدوراور کسان بھائی فاقہ کشی پر مجبور ہوگئے ہیں، شاہی سید نے مزید کہا کہ نئے پاکستان بنانے کا دعویٰ کرنے والی تبدیلی سرکار ہر محاذ پر ناکام ہوچکی ہے، عوام کو مہنگائی کے بوجھ تلے دبا دیا گیا ہے، ملک کی معیشت تباہ کردی گئی ہے، قرض لینے پر موت کو ترجیح دینے والے سلیکٹڈ حکمران نئے قرضے حاصل کررہے ہیں جس سے عوام مزید مہنگائی کے بوجھ تلے دب رہے ہیں،نئے پاکستان کا عویٰ کرنے والوں نے سہانے خواب دکھا کر غریب اور سفید پوش طبقے کی کمر توڑ دی ہے،موجودہ حکومت کی ناکام معاشی پالیسیوں کی وجہ سے مڈل کلاس طبقہ ختم ہورہا ہے، کرپشن کا خاتمہ اور تبدیلی کا نعرہ لگانے والوں نے کرپشن کی انتہا کردی ہے جس کی زندہ مثال پشاور کا بی آر ٹی منصوبہ ہے۔وزیراعظم اور ان کی کابینہ کے ارکان کی بدحواسیاں بتا رہی ہیں کہ ان کے قدموں کے نیچے سے زمین سرک رہی ہے، موجودہ حکمرانوں کی حرکتیں عالمی سطح پر جگ ہنسائی کا سبب بن رہی ہیں،ملک چلانا سیاستدانوں کا کام ہے بدقسمتی سے ملک کو غیر سیاسی لوگوں کے حوالے کردیا گیا ہے، ملک میں جب تک جمہوریت اور جمہوری ادارے مضبوط نہیں ہونگے اس وقت تک یہ ملک ترقی نہیں کرسکتا مضبوط جمہورت مضبوط معیشت کی ضمانت ہے، 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر