پاکستان ہر محاذ پر کشمیریوں کی اخلاقی‘ سفارتی مدد کرتا رہے گا‘ فخر امام

پاکستان ہر محاذ پر کشمیریوں کی اخلاقی‘ سفارتی مدد کرتا رہے گا‘ فخر امام

  



ملتان(سپیشل رپورٹر) کشمیر کمیٹی کے چیئرمین سید فخر امام نے کہا ہے کہ عالمی برادری نے گزشتہ 17 برس بعد مقبوضہ کشمیر میں پاکستان(بقیہ نمبر45صفحہ12پر)

کے موقف کو اپنانا شروع کردیاہے دنیا میں کشمیر جیسے ظلم کی مثال نہیں ملتی سیکیورٹی کونسل کے مستقل اراکین سے کشمیر کے معاملے پر رابطے میں ہیں وزیراعظم عمران خان کی ٹرمپ سے کشمیر پر بات ہوئی مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر خطے میں امن نہیں ہوسکتا میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کی اور اس کے بعد سے مسئلہ کشمیر کو نئی روح مل گئی۔سید فخر امام نے امید ظاہر کی کہ عالمی برادری بتدریج بھارت پر مسئلہ کشمیر کا تنازع حل کرنے کے لیے دباؤ ڈالے گی انہوں نے کہا کہ موجودہ امریکی نمائندگان کانگریس امریکی انتظامیہ پر شدید دباؤ ڈال رہے ہیں۔کشمیر کمیٹی کے چیئرمین نے کہا کہ عالمی برادری اہم کردار کرسکتی ہے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان دنیا بھر میں مسئلہ کشمیر کو بھرپور طریقے سے اجاگر کررہا ہے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ آرٹیکل 370 کے خاتمے کے بعد سے بھارتی فورسز نے مقبوضہ کشمیر میں 12 سے 13 ہزار نوجوان کو حراست میں لیا ہوا ہے۔مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میڈیا چینلز کو دشواریوں کا سامنا ہے اور گزشتہ تین ماہ کے دوران کئی مقامی صحافیوں کو مبینہ طور پر گرفتار کیا جاچکا ہے فخر اما م نے کہا کہ بھارت کے سابقہ جرنیل خواتین کے بارے میں بے ہودہ الفاظ استعمال کررہے ہیں دنیا میں کشمیر جیسے ظلم کی مثال نہیں ملتی یو این سیکیورٹی کونسل قرادادوں پر عمل درآمد کرائے انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ میں مستقبل مندوب منیر اکرم نے قراداد جمع کرائی ہے مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے کے لئے مختلف طریقے اپنائے گئے ہیں وزیر اعظم نے اقوام متحدہ میں بہترین طریقے سے مسئلہ کشمیر اجاگر کیا۔

چیئرمین

کبیروالا(تحصیل رپورٹر) عالمی سطح پر ”مسئلہ کشمیر“ ہاٹ ایشو بن چکا ہے،انڈیا کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف وزریوں کی انتہا (بقیہ نمبر51صفحہ12پر)

کئے ہوئے ہے،پاکستان کشمیریوں کو حق خودارادیت ملنے تک ان کی سیاسی،اخلاقی اور سفارتی مدد کرتا رہے گا،وزیر اعظم عمران خان اور حکومتی کوششوں سے پہلی بار دنیابھر میں کشمیریوں کے حق میں سنجیدگی کا مظاہرہ کیا جارہا ہے،ان خیالات کا اظہار چیئرمین کشمیر کمیٹی سید فخرامام نے گزشتہ روز کبیروالا شہر میں ممبر امن کمیٹی تحصیل کبیروالا غلام احمد خان بھٹہ نمبردار کی خوش دامن،غلام قادر خان بھٹہ،عبدالخالق خان بھٹہ کی والدہ اور مبشر حسن خان بھٹہ کی دادی،بستی مولا پور میں رانا محمد ادریس کے بھتیجے، راناعلی کوثر کے بھائی راناعلی ناصرمرحوم کی وفات پر ان کی رہائشگاہوں پر لواحقین سے اظہار تعزیت اور مرحومین کے لئے فاتحہ خوانی کرنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ 72سالوں سے چل رہا ہے اوراقوام متحدہ کی قراردادکے مطابق کشمیر متنازعہ علاقہ ہے،پہلی مرتبہ بین الاقوامی میڈیانے مسئلہ کشمیر کواتنی اہمیت دی ہے،جس سے انڈیا کافی حدتک دباؤ کاشکارہو گیاہے۔انہوں نے کہاکہ بھارت میں 20کروڑسے زائد مسلمان بستے ہیں،جن کے حقوق پامال کئے جارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ میں 70فیصدخطاب کشمیرپرکیا، ان کے خطاب کودنیانے توجہ سے سناہے اور72سالوں میں پہلی مرتبہ فرانس کی پارلیمنٹ میں بھی کشمیر پربحث ہوئی۔اس موقع پر اطہر یوسف خان بھٹہ،سید منتظر مہدی،میاں حسن مشتاق سہو،راؤ عمر ان مانی،مہر قیصر عباس ترگڑ،سید فرخ رضا،راؤ واجد علی،مہر عمران محمود اُترا،حفیظ سعیدی،مہر بلال اعجاز اُترا،حاجی محمد ارشد سنگا،شیخ محمد ارشد،سید شہزاد رضا،محمد عمران خان سیال،میاں معصب حیدر سرگانہ،،مبشر حسن خان بھٹہ اور دیگر بھی موجود تھے۔

فخر امام

مزید : ملتان صفحہ آخر