کرم پور: دکانیں مسمار کرنے پر متاثرین کا انتظامیہ کیخلاف مظاہرہ‘ نعرے بازی

  کرم پور: دکانیں مسمار کرنے پر متاثرین کا انتظامیہ کیخلاف مظاہرہ‘ نعرے بازی

  



وہاڑی(بیورورپورٹ+نمائندہ خصوصی)تبدیلی سرکار کے دور میں قانون بھی تبدیل ہوگئے ٹاون کمیٹی کرمپور میں ضلعی انتظامیہ نے مبینہ طور پر اے ڈی سی جی بہاولپور کی مبینہ ایماء پرکروڑوں مالیت کی دوکانیں مسمار کرادیں واقعات کے مطابق نواحی علاقہ ٹاؤن کمیٹی کرمپور میں اے ڈی سی (بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

جی بہاولپور مہر خالد کی مبینہ ایماء پر ضلعی انتظامیہ نے شہریوں کی کروڑوں مالیت کی دوکانیں مسمار کردیں متاثرین افتخار الحسن بھٹی,فیض الحسن بھٹی,محمد شاہ نواز کی قیادت میں اہل علاقہ مزمل فیاض، گلزار احمد، عبدالوحید، محمد قیصر، خادم حسین حاجی اللہ دتہ،ملک و دیگر نے احتجاج کیا اس موقع پر افتخار الحسن بھٹی، فیض الحسن بھٹی اور شاہ نواز وغیرہ نے صحافیوں کو بتایا کہ 1968سے ہمارے آباؤ اجداد آباد اس رقبہ پر مکین ہیں اور 1984 میں حکومت نے ہمیں مالکانہ حقوق دئیے اس کے کچھ عرصہ بعد محلہ اسلام پورہ میلسی کے رہائشی موجودہ اے ڈی سی جی بہاولپور مہر خالد سے تنازعہ پیدا ہو گیا کیونکہ اسکا پلاٹ ادھر واقع ہے جس پرہمارے پاس عدالتی حکم امتناعی ہونے کے باوجود مبینہ طور پر اے ڈی سی جی بہالپور مہر خالد کے پلاٹ کو راستہ دینے کیلئے ہماری کروڑوں مالیت کی دوکانیں مسمار کردی گئی ہیں حکم امتناعی دکھانے کے باوجود ضلعی انتظامیہ اورپولیس نے توہین عدالت کی ہے وزیراعظم عمران خان عوام کو گھر بنا کر دینے کے دعوے کررہے ہیں یہاں ہماری بنی بنائی دوکانیں گرادی گئی ہیں پولیس اور انتظامیہ نے ہمیں بہت تنگ کررکھا ہے وزیراعظم عمران خان,چیف جسٹس آف پاکستان اور وزیراعلی پنجاب فوری نوٹس لے کر انصاف فراہم کریں,مظاہرین نے مطالبات کے حق میں شدید نعرے بازی بھی کی جبکہ اے ڈی سی جی بہاولپور سے رابطہ کرنے پرموقف میں کہا کہ یہ آپریشن ہائی کورٹ کی ڈائریکشن پر ضلعی انتظامیہ نے ناجائز قابضین کے خلاف کیا ہے میرا اس سے کوئی تعلق نہیں ہے یہ مکمل طور پر اسٹیٹ لینڈ تھی جس پر عرصہ دراز سے ناجائز قابضین قابض تھے

نعرے بازی

مزید : ملتان صفحہ آخر