چلغوزہ 8000روپے فی کلو کاروبار جزوی طور پر بند

  چلغوزہ 8000روپے فی کلو کاروبار جزوی طور پر بند

  



پشاور (آن لائن) چلغوزہ کی قیمت 8000روپے فی کلو تک پہنچنے کے بعد کاروبار جزوی طور پر بند ہو گیا ہے چلغوزے کی قیمت 8ہزار روپے فی کلو تک ہونے کے بعد شہریوں کی جانب سے ان کے خرید و فروخت بند کر دیا گیا ہے اور چلغوزہ مرتبانوں کی زنیت بن گئی ہے چلغوزہ کی قیمت میں اضافہ کے باعث ٹماٹر کی طرح یہ بھی سوشل میڈیا پر ایک بحث بن گیا ہے چلغوزہ کی قیمت 8000روپے فی کلو تک پہنچ گئی ہے ہشتنگری، صدر، نمک منڈی، یونیورسٹی روڈ، شہر کے مختلف مقامات پر چلغوزہ کی خرید و فروخت نہیں ہو رہی ہے۔ چلغوزے کی قیمت لوگ پوچھنے کی حد تک محدود ہو گئی ہے وزیرستان میں دیڑھ کرو ڑ روپے کے چلغوزے کی چوری ہونے اور بعدازاں برآمد ہونے کے بعد اس کی بیرون ممالک امپورٹ ہو رہاہے چلغوزے کی قیمت میں رواں سال مزید دو ہزار روپے فی کلو کا اضافہ ہوا ہے گزشتہ سال چلغوزے کی قیمت 6000ہزار روپے فی کلو تھی چلغوزے کی قیمت میں اضافہ کے بعد پشاور کے تاجرپانچ سے پندرہ کلو تک اس کی خرید و فروخت کرتے ہیں اور جبکہ 100اور 200روپے کی خرید و فروخت بھی نہیں ہوتی ہے۔

چلغوزہ

مزید : صفحہ اول