40لاکھ سے زائد تاجر اور صنعتکار حکومتی پالیسیوں کیخلاف سراپا احتجاج ہیں:ظاہر شاہ

40لاکھ سے زائد تاجر اور صنعتکار حکومتی پالیسیوں کیخلاف سراپا احتجاج ہیں:ظاہر ...

  



مردان (بیورو رپورٹ) مردان چیمبرآف کامرس کے سابق صدروایف پی سی سی آئی کے جنرل باڈی ممبرظاہر شاہ خان اورسابق ایگزیکٹیوممبرمشتاق احمدخان نے کہاہے کہ ایف پی سی سی آئی کاکردار ملک کے چھوٹے بڑے چیمبرزاورایسوسی ایشنز سے فیس کی مدمیں کروڑوں روپے وصول کرکے بے مقصد دوروں اوردعوتوں پرخرچ کرنے تک محدودہے،چالیس لاکھ سے زائد تاجراورصنعتکارحکومتی پالیسیوں کیخلاف سراپااحتجاج ہیں،تاہم ایف پی سی سی آئی کی موجودہ نااہل قیادت خواب خرگوش کے مزے لوٹ رہی ہے اوراب تو یوبی جی نے بزنس کمیونٹی کے سب سے بڑے ادارے ایف پی سی سی آئی کوتجربہ گاہ بناتے ہوئے ایک ڈاکٹرکوصدرات کیلئے نامزدکیاہے،جوپاکستان کی بزنس کمیونٹی کیساتھ بھونڈا مذاق ہے،جس شخص نے تمام عمر طب کی تعلیم حاصل کرنے اور پریکٹس میں گزاری ہے وہ صنعت وتجارت،جمودکاشکارمعیشت اور بزنس کمیونٹی کو مشکلات کے بھنور سے کیسے نکال سکتاہے، انہوں نے مزیدکہاکہ ملک کے ممتاز صنعتکاروبزنس مین پینل کے صدارتی امیدوار میاں انجم نثار اوران کی پوری کابینہ ہی بزنس کمیونٹی کے مسائل کا سدباب،معیشت کوبہتر اورتاجروں وصنعتکاروں کاایف پی سی سی آئی پراعتماد بحال کرسکتی ہے،بزنس مین پینل کے مرکزی چیئرمین میاں انجم نثارکی بزنس کمیونٹی کیلئے خدمات کسی سے ڈھکی چھپی ہے اور نہ ہی انکانام کسی تعارف کامتاج نہیں ہے،انہوں نے ایگزیکٹیواورجنرل باڈی ممبرزسے پرزوراپیل کی ہے کہ بہترمستقبل کیلئے ایف پی سی سی آئی کے الیکشن 2020میں بزنس مین پینل کی پوری کابینہ کو کامیاب بنائیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر