قومی ٹیم نے اپنی کارکردگی سے بہت مایوس کیا، شابئقین کرکٹ

  قومی ٹیم نے اپنی کارکردگی سے بہت مایوس کیا، شابئقین کرکٹ

  



لاہور(سپورٹس رپورٹر) قومی ٹیم نے پرفارمنس سے بہت مایوس کیا ہے اب بھی وقت ہے کہ عمدہ پرفارمنس سے کم بیک کیا جائے کپتان اظہر علی کو پریشر میں آنے کے بجائے اپنے کھیل پر مکمل توجہ دینے کی ضرورت ہے سرفراز احمد کپتان ہوتے تو نتائج کچھ اور ہوتے ان خیالات کا اظہار شابئقین کرکٹ نے پہلے ٹیسٹ میچ میں آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست پر اظہار خیال کرتے ہوئے کیا خالد، فیاض،علی،فیاض،عمیر،علی سفیان،خرم،دستگیر اور ماجھا نے کہا کہ پاکستان کی ٹیم کے لئے آسٹریلیا کو اس کی سر زمین پر شکست دینا آسان نہیں ہے اس کے لئے بہت زیادہ محنت کی ضرورت ہے اور پاکستان کی ٹیم نے اتنی محنت نہیں کی آسٹریلوی ٹیم میدان میں جوش وجذبہ کے ساتھ کھیلتی ہوئی نظر آتی ہے اور ہماری ٹیم بہت جلد پریشر میں آجاتی ہے اس طرح میچ نہیں جیتے جاتے بابر اعظم نے بہت اچھی بیٹنگ کی مگر ان کے علاوہ کسی اور نے عمدہ بیٹنگ کا مظاہرہ نہیں کیا ہے جس کی وجہ سے ہم بہت مایوس ہیں سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹانے کا فیصلہ درست نہیں تھا ان کو کپتان برقرار رکھنا چاہئیے تھا کیونکہ وہ اظہر علی سے بہت اچھے کپتان ہیں اور ان کو تجربہ بھی بہت ہے اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے نذیر،عمیر،شاکر،زبیر،اسد،حمید اور ہمایوں نے کہا کہ قومی ٹیم نے ہماری توقعات پر پانی پھیر دیا ہے اور ہم نے تو سوچا تھا کہ ٹیم نئے کپتان کی قیادت میں آسٹریلیا کے خلاف کامیابی حاصل کرے گی مگر ہمیں ٹیم نے پرفارمنس سے بہت مایوس کیا ہے اب ضرورت اس بات کی ہے کہ قومی ٹیم اگلے ٹیسٹ میچ کی بھرپور تیاری کرے اور میدان میں اترے۔

اور کوشش کرے کہ جو غلطیاں اس میچ میں ان سے ہوئی ہیں اب دوبارہ نہ ہو پاکستان کی ٹیم میں بہت اچھے کھلاڑی ہیں مگر ان میں تجربہ کی کمی ہے جس کی اس وقت بہت زیادہ ضرورت ہے اور اب دیکھنا یہ ہے کہ اگلے ٹیسٹ میچ کے لئے ٹیم مینجمنٹ کیسا پلان تیار کرتی ہے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی