عرب ملک میں نوجوان نے شادی کی تقریب کے دوران فوٹو شوٹ کے موقع پر ہی دلہن کو طلاق دیدی لیکن دراصل دلہن نے جسم کا کونسا حصہ نکال کر دکھایا تھا؟ انتہائی حیران کن وجہ سامنے آگئی

عرب ملک میں نوجوان نے شادی کی تقریب کے دوران فوٹو شوٹ کے موقع پر ہی دلہن کو ...
عرب ملک میں نوجوان نے شادی کی تقریب کے دوران فوٹو شوٹ کے موقع پر ہی دلہن کو طلاق دیدی لیکن دراصل دلہن نے جسم کا کونسا حصہ نکال کر دکھایا تھا؟ انتہائی حیران کن وجہ سامنے آگئی

  



قاہرہ(ویب ڈیسک) مصر میں ایک شہری شادی کی تقریب میں فوٹو شوٹ کے دوران دلہن کو طلاق دے کر بارات واپس لے گیا۔

مصری اخبار البیان کے مطابق مصر کے ایک نواحی علاقے میں نوجوان دولہا نے 28 سالہ دلہن کو یہ کہہ کر باراتیوں کے سامنے طلاق دے دی کہ تم نے میری ماں کو زبان چڑائی ہے۔ دولہا اپنی بارات واپس لے گیا جب کہ دلہن کی والدہ کی حالت غیر ہوگئی۔مصری دلہن نے البیان اخبار کے نمائندے کو بتایا کہ شوہر نے میرا مو¿قف جانے بغیر ہی مجھے طلاق دے دی، میں ان سے رابطہ کرنے کی کوشش کر رہی ہوں لیکن کوئی جواب موصول نہیں ہو رہا۔

ایکسپریس نے اخبار کے حوالے سے بتایا کہ دوسری جانب دولہا نے موقف اختیار کیا ہے کہ ماں سے بدتمیزی کو کسی صورت برداشت نہیں کروں گا، میں نے طلاق دے دی ہے اور اب وہ محض مہر کی رقم کیلئے مجھ سے رابطہ کرنے کی کوشش کر رہی ہے جس کےلیے اسے عدالت کے دھکے کھانے پڑیں گے۔دولہا کی جانب سے دوٹوک جواب ملنے پر دلہن نے بھی عدالت میں مقدمہ دائر کر دیا ہے جس میں مو¿قف اختیار کیا گیا ہے کہ یہ انسان زندگی گزارنے کے لائق نہیں۔ ابھی تک عدالت نے مقدمے کی سماعت کی کوئی تاریخ مقرر نہیں کی ہے۔

مزید : عرب دنیا