ایساتاثر دینے کی کوشش کی گئی جیسے عدلیہ کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے ، اللہ کے شکرگزار ہیں عدالتوں سے سرخرو ہوئے ،فردوس عاشق اعوان

ایساتاثر دینے کی کوشش کی گئی جیسے عدلیہ کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے ، اللہ کے ...
ایساتاثر دینے کی کوشش کی گئی جیسے عدلیہ کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے ، اللہ کے شکرگزار ہیں عدالتوں سے سرخرو ہوئے ،فردوس عاشق اعوان

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم کی معاون خصوصی اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ اللہ کے شکرگزار ہیں کہ عدالتوں سے سرخرو ہوئے ،ایساتاثر دینے کی کوشش کی گئی جیسے عدلیہ کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے ،اسلام آباہائیکورٹ کو وسائل کی کمی کا سامنا ہے ،عدالت کو بہترین انفراسٹرکچر کی ضرورت ہے۔

معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے توہین عدالت کیس میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس عدالتی عمل سے پہلے کبھی نہیں گزری ، ایساتاثر دینے کی کوشش کی گئی جیسے عدلیہ کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے ،اللہ کے شکرگزار ہیں عدالتوں سے سرخرو ہوئے ،انہوں نے کہا کہ عدالتی نظام سے جڑے حقائق سے آگاہی ملنے کا موقع ملا،اسلام آباہائیکورٹ کو وسائل کی کمی کا سامنا ہے ،عدالت کو بہترین انفراسٹرکچر کی ضرورت ہے،فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ ڈسٹرکٹ کورٹ کے حوالے سے بنائی گئی کمیٹی نے مسائل کاحل نکالا ہے ،جون تک اسلام آبادہائیکورٹ نئی عمارت میں منتقل ہو جائے گی،وزیراعظم عدالتی اصلاحات سے متعلق پرعزم ہیں ۔

فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ قرآن پاک کی بے حرمتی پر اوآئی سی ایسے اقدامات کرے جس سے اسلامو فوبیاکا خاتمہ ہو،مولانا کا پلان اے بری طرح پٹ گیا اور پلان بی کو بھی عوام نے مسترد کردیا،مولانا فضل الرحمان اب خود کو طفل تسلیاں دے رہے ہیں،انہوں نے کہاکہ عوام نے مولانا کے ارادوں کو خاک میں ملا دیا ہے ،عوام نے 2018میں بھی ان کی پالیسیوں کو ٹھکرایاتھا اب بھی ایسا ہی ہواہے،اگرکوئی بیمار ہے تو درخواست دے ،عدالت ان کی درخواست ضرور سنے گی ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد