جب کام نہیں کرتے تو تنخواہ کیوں مانگتے ہیں؟ہمیں تو لگ رہا ہے خیبرپختونخوا حکومت دیوالیہ ہو جائےگی،سپریم کورٹ

جب کام نہیں کرتے تو تنخواہ کیوں مانگتے ہیں؟ہمیں تو لگ رہا ہے خیبرپختونخوا ...
جب کام نہیں کرتے تو تنخواہ کیوں مانگتے ہیں؟ہمیں تو لگ رہا ہے خیبرپختونخوا حکومت دیوالیہ ہو جائےگی،سپریم کورٹ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے محکمہ زراعت خیبرپختونخوا کے ملازم کی تنخواہ کے حصول کیلئے درخواست خارج کردی،جسٹس گلزاراحمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ جب کام نہیں کرتے تو تنخواہ کیوں مانگتے ہیں؟ہمیں تو لگ رہا ہے کہ خیبرپختونخوا حکومت دیوالیہ ہو جائےگی۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان میں محکمہ زراعت خیبرپختونخوا کے ملازم کی تنخواہ کے حصول کیلئے درخواست کی سماعت ہوئی،وکیل نے کہاکہ

پشاورہائیکورٹ نے صوبائی حکومت کوتنخواہ اداکرنے کاحکم دیاہے،جسٹس گلزاراحمد نے استفسار کیاکہ جس وقت کی تنخواہ کا تقاضا کر رہے ہیں اس وقت آپ نے کام کیا ہے؟وکیل احمد سعید نے کہاکہ کچھ عرصہ کیا ہے اور کچھ عرصہ نہیں ،جسٹس گلزاراحمد نے کہا کہ معلوم نہیں پشاور ہائی کورٹ کیا کر رہی ہے؟ہمیں پشاور ہائیکورٹ کے احکامات کی سمجھ نہیں آرہی۔

جسٹس گلزار احمدنے کہاکہ جب کام نہیں کرتے تو تنخواہ کیوں مانگتے ہیں؟ہمیں تو لگ رہا ہے کہ خیبرپختونخوا حکومت دیوالیہ ہو جائےگی،سپریم کورٹ نے ملازم احمد سعید کی درخواست خارج کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد