لاہور میں شادی سے تین روز قبل بہنوئی کے ہاتھوں دلہن قتل لیکن دونوں کے کتنے عرصے سے تعلقات تھے؟ مقامی اخبار نے پولیس کے حوالے سے بڑا دعویٰ کردیا

لاہور میں شادی سے تین روز قبل بہنوئی کے ہاتھوں دلہن قتل لیکن دونوں کے کتنے ...
لاہور میں شادی سے تین روز قبل بہنوئی کے ہاتھوں دلہن قتل لیکن دونوں کے کتنے عرصے سے تعلقات تھے؟ مقامی اخبار نے پولیس کے حوالے سے بڑا دعویٰ کردیا

  



لاہور(ویب ڈیسک)لاہور کے علاقہ گلبرگ میں چند روز قبل بہنوئی کے ہاتھوں قتل ہونے والی لڑکی حرا کے کیس میں مزید انکشافات سامنے آگئے ہیں،معلوم ہوا ہے کہ ملزم احسن کے اپنی سالی حراکے ساتھ اڑھائی سالوں سے ناجائز تعلقات تھے اوراس نے ویڈیو زبھی بنا رکھی تھی جن کی بنیاد پر وہ مقتولہ کو بلیک میل کرتاتھا اسکی بہن کو طلاق دینے کی دھمکی بھی دی۔

روزنامہ جنگ کے مطابق جب حرا کی شادی طے پائی تو ملزم احسن بلیک میل کرنے لگا کہ وہ شادی سے انکار کرے بصورت دیگر اس کی ویڈیوز منظر عام پر لے آئے گا، گزشتہ اڑھائی ماہ کے دوران دونوں کے درمیان ساڑھے 12ہزار میسجز اور کئی کالز کا تبادلہ ہوا۔ وقوعہ سے ایک دن قبل ملزم نے حراکو آخری بار ملنے کا کہا لیکن اس نے انکار کر دیا ،بعدازاں ملزم نے مقتولہ کی ایک بہن کو فون کرکے بتایا کہ حراکی کچھ قابل اعتراض باتیں سامنے آئی ہیں جو وہ ڈسکس کرنا چاہتا ہے ، جس کے بعد حرا نے ملنے پر آمادگی ظاہر کی۔

ملزم نے گھر کے پاس ہی اسے بلایا جہاں سے اسے کرائے کے ایک کمرے میں لے کر جانا تھا تاہم مقتولہ نے جانے سے انکار کردیا دونوں میں تلخ کلامی ہوئی تو ملزم نے گولیاں ماردیں۔ اس حوالے سے ایس ایچ او گلبرگ مقصود الرحمان نے بتایا کہ ملزم مقتولہ کے جنازہ میں بھی شریک ہوا لیکن جب موبائل کا ڈیٹا حاصل کیا گیا توپولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور