کیا واقعی وزیراعظم نے سینئر تجزیہ کار ارشاد بھٹی کو چائے نہیں پلائی؟

کیا واقعی وزیراعظم نے سینئر تجزیہ کار ارشاد بھٹی کو چائے نہیں پلائی؟
کیا واقعی وزیراعظم نے سینئر تجزیہ کار ارشاد بھٹی کو چائے نہیں پلائی؟

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)معروف تجزیہ کارارشاد بھٹی کی وزیراعظم عمران خان سے ملاقات اور اس دوران ٹیبل پر موجود ایک کپ کی تصویر سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوئی اور اس پرکئی سینئر صحافیوں نے طنز و مزاح کا بازار بھی گرم رکھا تاہم اب ارشاد بھٹی اصل حقیقت سامنے لے ہی آئے ہیں کہ اِنہیں عمران خان نے نہ صرف بہترین کافی پلائی بلکہ ساتھ میں بسکٹ بھی پیش کئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق چار دن پہلے 21 نومبر بروز جمعرات کو شام 5 بجے ارشاد بھٹی وزیراعظم ہاوس پہنچے جہاں کچھ دیر بعد اِنہیں وزیراعظم سے ملوادیا گیا۔ملاقات کے وقت کی گئی تواضع کے حوالے سے ارشاد بھٹی نے اپنے کالم میں تفصیلات بیان کی ہیں،اُس میں سے چند پیراگراف من و عن پیش کئے جارہے ہیں۔ارشاد بھٹی  نے اپنے کالم میں لکھا  کہ ”وزیراعظم اس دن خوشگوار موڈ میں تھے، پراعتماد، ریلکس، بات بات پہ ہنس رہے تھے، میرے ہر سوال کا ٹو دی پوائنٹ جواب، جیسے میں نے کہا، سنا جا رہا ”آپ کی حکومت جانے والی“، بولے ” خواب دیکھنے پر تو کوئی پابندی نہیں“ میں نے کہا ”مائنس ون فارمولے پر بھی بات ہو رہی“ بولے ”میں بھی سن چکا ہوں یہ لطیفہ“ میں نے کہا ”سینئر صحافی لکھ چکے، کہہ رہے، فروری، مارچ میں حکومت جا رہی“ بولے ”اگر فروری، مارچ 2025 کی بات ہو رہی ہے تو ٹھیک ورنہ ان سب کو جنہیں میرا چہرہ پسند نہیں۔”وہاں وزیراعظم نے اپنی والدہ کی باتیں بھی سنائیں، بتایا کیسے گھر سے نکلتے وقت والدہ درود شریف پڑھ کر مجھ پر پھونکا کرتیں، نظر اتارا کرتیں اور تو اوراُس شام وزیراعظم نے بڑی مزیدار کافی پلائی وہ بھی بسکٹوں کے ساتھ، یہ عیاشی اور عمران خان، پہلی بار اس خوشگوار تجربے سے مستفید ہوا۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس