اسرائیل میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا بچپن کا گھر مل گیا؟ بڑا دعویٰ سامنے آگیا

اسرائیل میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا بچپن کا گھر مل گیا؟ بڑا دعویٰ سامنے ...
اسرائیل میں حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا بچپن کا گھر مل گیا؟ بڑا دعویٰ سامنے آگیا
سورس:   Twitter

  

تل ابیب(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہرین آثار قدیمہ نے حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا بچپن کا گھر تلاش کرنے کا دعویٰ کر دیا۔ انڈیا ٹائمز کے مطابق ماہرین کو یہ گھر اسرائیل کے شہر ناصرہ میں ملا ہے۔ پہلی صدی عیسوی میں تعمیر ہونے والا یہ گھر اب بھی اچھی حالت میں موجود ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس گھر میں صدیوں پہلے ایک چرچ بھی بن چکا ہے۔ ماہرین سالہا سال سے اس گھر کی تلاش کے لیے تحقیق کر رہے تھے اور بالآخر گزشتہ دنوں انہیں کامیابی مل گئی۔

رپورٹ کے مطابق یہ گھر تلاش کرنے والی ٹیم کی سربراہی برطانوی ماہر پروفیسر کین ڈارک کر رہے ہیں جنہوں نے 2006ءمیں اس گھر کی تلاش کا کام شروع کیا تھا۔ ماہرین کی اس ٹیم نے اپنی تحقیق میں یہ بھی ثابت کیا ہے کہ یہ گھر پہلی صدی میں تعمیر کیا گیا تھا۔ واضح رہے کہ پروفیسر کین ڈارک جس چرچ کو حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا گھر قرار دے رہے ہیں وہ اسرائیلی شہر ناصرہ کا مشہور سسٹرز آف ناصرہ کانونٹ ہے۔ یہ چرچ رومی سلطنت کے دور میں ایک قدرتی غار میں تعمیر کیا گیا تھا اور پروفیسر کین ڈارک کا کہنا ہے کہ یہی غار دراصل حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا بچپن کا گھر تھی جہاں انہوں نے پرورش پائی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -روشن کرنیں -