ارباب فاروق کی کوششوں سے متنی میں جائیداد کا تنازعہ حل 

  ارباب فاروق کی کوششوں سے متنی میں جائیداد کا تنازعہ حل 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) جمعیت علمائے اسلام کے صوبائی رہنماء و سابق امیدوار پی کے 75 ارباب فاروق جان اور جرگہ ممبران کی کوششوں سے متنی میں جائیداد کا تنازعہ حل ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق متنی کے رہائشی گل وزیر نے میاں عالمزیب شریکرہ کے جائیداد پر ناجائز دعویٰ کیا تھا جس کے پر امن حل کیلئے ایک جرگہ تشکیل دیا گیا جس میں جمعت علمائے اسلام کے صوبائی رہنماء و سابق امیدوار پی کے 75 ارباب فاروق جان اور جرگہ ممبران ممبر قومی اسمبلی ناصر موسیٰ زئی کے بھائی حاجی شاہد خان موسیٰ زئی‘ حاجی محمد شیر ماشو گگر‘ عظمت خان ماشو گگر‘ ثمین جان ماشوگگر‘ ناظم ماشو گگر جمروز خان اور دیگر نے دونوں فریقین کو سنا اور باقاعدہ دستاویزات کو بھی چیک کیا جبکہ گل وزیر کی جانب سے دستاویزات نہ دکھانے پر دعویداری کو غلط ثابت کردیا اور میاں عالمزیب کے حق میں فیصلہ سنا دیا اور کہا کہ مذکورہ جائیداد سے گل وزیر نامی شخص کا کوئی تعلق نہیں ہے اور وہ اس سے دستبردار ہو جائے اور آئندہ کسی بھی قسم کی دعویداری سے گریز کرے۔ جرگہ ممبران نے دونوں فریقین سے قرآن شریف پر حلف لیا کہ وہ آئندہ بھائیوں کی طرح رہیں گے۔اس موقع پر جمعیت علمائے اسلام کے صوبائی رہنماء وسابق امیدوار پی کے 75 ارباب فاروق جان نے اپنے خطاب میں کہا کہ وہ دونوں فریقین کا انتہائی مشکور ہے جنہوں نے انہیں عزت بخشی اور مسئلے کو افہام و تفہیم سے حل کردیا۔ انہوں نے کہا کہ تنازعات اور لڑائی جھگڑوں سے دو گھر اجڑ جاتے ہیں مگر مسئلہ جوں کا توں ہوتا ہے لہٰذا آپس میں بھائی چارے سے زندگی گزاریں۔ انہوں نے کہا کہ فریقین سمیت ہر شخص صبر اور تحمل کا دامن پکڑے اور تنازعات سے گریز کریں اور عفور و در گزر کی پالیسی اپنائیں تاکہ کسی قسم کا خون خرابہ نہ ہو۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -