سرحد چیمبر کا بین الاقوامی ٹریننگ میں نمائندگی دینے کا مطالبہ 

سرحد چیمبر کا بین الاقوامی ٹریننگ میں نمائندگی دینے کا مطالبہ 

  

پشاور(سٹی رپورٹر) سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے نیشنل پراڈکٹیویٹی آرگنائزیشن (NPO)کو خیبر پختونخوا کی بزنس کمیونٹی کو بین الاقوامی سطح پر ہونیوالی ٹریننگ اور پروگرام میں بھرپور نمائندگی دینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ بزنس کمیونٹی کی مختلف شعبہ جات میں کاروباری فنی اور ٹیکنیکی استعداد کار بڑھانے کے لئے اپنا موثر کردار ادا کریں تاکہ کاروباری مرد و خواتین کی مینو فیکچرنگ مصنوعات کو بہتر انداز میں فروغ و مارکیٹ میں متعارف کرانے کے مواقع میسر آسکیں۔ یہ مطالبہ گذشتہ روز سرحد چیمبر کے صدر حسنین خورشید احمد کی زیر صدارت چیف ایگزیکٹو آفیسر این پی او محمد عالمگیر چوہدری کے دورہ سرحد چیمبر کے موقع پر اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر سرحد چیمبر کے سینئر نائب صدر عمران خان مہمند ایگزیکٹو کمیٹی کے اراکین محمد اورنگزیب فضل مقیم ایس منہاج الدین حاجی غلام حسین اعجاز خان آفریدی انچارج ریجنل آفس NPO پشاور وصی اللہ NPO آفیسر آفتاب خان اور دیگر بھی موجود تھے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سرحد چیمبر کے صدر حسنین خورشید احمد نے کہاکہ NPO  سرحد چیمبر کے ممبران کو ملکی و بین الاقوامی سطح پر ہونیوالی ٹریننگ سیمینار ورکشاپ اور بزنس میٹنگ میں شرکت کو یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوبہ کی بزنس کمیونٹی کی مختلف شعبہ جات میں استعداد کار کو بڑھانے کے لئے بھی اقدامات کئے جائیں تاکہ وہ اپنی ہاتھ سے بنی مصنوعات کو بہتر انداز میں فروغ اور مارکیٹ میں متعارف کرواسکیں۔ انہوں نےNPOسرحد چیمبر اور بزنس کمیونٹی کے ساتھ قریبی روابط کو بڑھانے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہاکہ پاک چین راہداری منصوبہ کے تناظر میں بزنس کمیونٹی کے لئے چینی زبان کا سیکھنا بھی بہت اہم ہوگیا ہے اس حوالے سے این پی او ایک خصوصی چینی زبان سکھانے کے لئے ٹریننگ کے انعقاد کے لئے اقدامات کئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ بزنس خواتین کی استعداد کار بڑھانے کے لئے وویمن چیمبر کے ساتھ باہمی روابط استوار کئے جائیں۔ NPO کے چیف ایگزیکٹو آفیسر محمد عالمگیر چوہدری نے اپنے ادارے کے جاری متعدد پراجیکٹ اور تربیتی پروگراموں سمیت نیشنل پروڈکٹیویٹی موومنٹ کے بارے میں تفصیلا آگاہ کیا۔ انہوں نے کہاکہ NPO اور دیگر متعلقہ اداروں کی تعاون سے پیداواری سیکٹر کو جدت لانے کے لئے اقدامات کر رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ این پی او دو سیکٹرز پر توجہ مرکوز رکھے ہوئے ہے جس میں ملٹی کنٹری پروگرام یعنی بین الاقوامی ٹریننگ کورسز اور بینچ مارکنگ کے علاوہ انفرادی تربیتی پروگرام جس کے لئے سفارشات دو سائیکلز کے لئے مانگی گئی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ کمپنیوں اور آرگنائزیشن کی ترقی بھی این پی او کے اہم مشن میں شامل ہے جس کے ذریعے بین الاقوامی ٹرینرز ماہرین اور علاقائی ٹرینرز کو کوئی مینو فیکچرنگ یونٹ تک رسائی دی جاتی ہے تاکہ ان کی استعداد کار اور گرانٹ میں مزید اضافہ کیا جاسکے۔ اس موقع پر سرحد چیمبر کے سینئر نائب صدر عمران خان مہمند ایگزیکٹوکمیٹی کے اراکین منہاج الدین محمد اورنگزیباعجاز خان آفریدی اور دیگر نے بھی خطاب کیا اور بزنس کمیونٹی اور پیداواری سیکٹرز کی استعداد کار بڑھانے کے لئے مختلف سفارشات و تجاویز پیش کیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -