لیک آڈیو اور بیان حلفی پر ٹرتھ  کمیشن بنایا جائے،پاکستان بار کونسل

  لیک آڈیو اور بیان حلفی پر ٹرتھ  کمیشن بنایا جائے،پاکستان بار کونسل

  

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) پاکستان بار کونسل  نے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی آڈیو لیک اور گلگت بلتستان کے چیف جج جسٹس رانا شمیم کے بیان حلفی  پر ٹرتھ کمیشن بنانے کا مطالبہ کردیا اور کہا ہے کہ کمیشن کی سربراہی غیر متنازعہ  ریٹائرڈ چیف جسٹس  ہو، کمیشن میں غیر متنازعہ وکیل اور سول سوسائٹی کے نمائندے کو بھی شامل کیا جائے۔بدھ کو وائس چیئرمین پاکستان بار کونسل خوشدل خان کی زیر صدارت پاکستان بار کونسل کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی آڈیو لیک اور گلگت بلتستان کے چیف جج جسٹس رانا شمیم کے بیان حلفی سے متعلق معاملات زیر غور لائے گئے۔ پاکستان بار کونسل اجلاس میں شرکاء  نے متفقہ طور پر فیصلہ اور مطالبہ کیا کہ آڈیو لیکس اور بیان حلفی کے معاملے کو اعلیٰ عدلیہ سنجیدگی کے بعد اس کی آزادانہ تحقیقات کرائی جائیں جس کیلئے ایک ٹرتھ کمیشن قائم کیا جائے۔ کمیشن کی سربراہی غیر متنازعہ  ریٹائرڈ چیف جسٹس پر قائم ہو، کمیشن میں غیر متنازعہ وکیل اور سول سوسائٹی کے نمائندے کو شامل کیا جائے۔ اجلاس میں کہا گیا کہ ایسے معاملات سے عدلیہ کی غیر جانبداری اور الزام پر سوالات اٹھتے ہیں جس کو واضح کرنا اور حقائق عدلیہ کے سامنے لانا بہت ضروری ہیں۔ عدلیہ کے خودمختار اور آزاداداہ کیلئے اپنے وقار کی بحالی لازمی ہے۔

پاکستان با کونسل

مزید :

صفحہ اول -