سزائے موت کا قیدی ہائیکورٹ سے بری، 5لاکھ جرمانہ بھی کالعدم قرار

سزائے موت کا قیدی ہائیکورٹ سے بری، 5لاکھ جرمانہ بھی کالعدم قرار

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائیکورٹ نے رشتہ نہ دینے پر لڑکی کے قتل کے مقدمہ میں سزائے موت کے قیدی آصف شہزاد کو بری کرتے ہوئے 5لاکھ روپے جرمانہ بھی کالعدم قرار دے دیا،مسٹرجسٹس شہرام سرور چودھری اور مسٹرجسٹس صداقت علی خان پرمشتمل ڈویژن بنچ نے ناکافی شواہد کی بناء پر سیشن کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیاہے،اپیل کنندہ کی جانب سے شیراز ذکا ایڈووکیٹ نے موقف اختیارکیا کہ ملزم آصف شہزاد کے خلاف تھانہ پھالیہ میں قتل کا مقدمہ درج کیا گیا،آصف شہزاد پر صبا شہزادی کے قتل کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا،مقتول صبا شہزادی کے والد نے اس کا رشتہ آصف شہزاد کو دینے سے انکار کیا،سیشن کورٹ منڈی بہاؤالدین نے حقائق کے برعکس ملزم آصف شہزاد کو سزائے موت، قید اور جرمانے کی سزا کا حکم سنایا،عدالت سے استدعاہے کہ آصف شہزاد کو بری کرنے کاحکم دیاجائے۔

سزاکالعدم قرار

مزید :

صفحہ آخر -