بھارت کے غیرذمہ دارانہ بیانات ثابت کرتے ہیں وہ سلامتی کونسل کارکن بننے کا اہل نہیں، پاکستان 

  بھارت کے غیرذمہ دارانہ بیانات ثابت کرتے ہیں وہ سلامتی کونسل کارکن بننے کا ...

  

  اسلام آباد (این این آئی)پاکستان نے بھارت کی جانب سے اقوام متحدہ سیکیورٹی کونسل میں دئیے گئے بیان کو مسترد کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ بھارت کے غیرذمہ دارانہ بیانات اس بات کا ثبوت ہیں کہ بھارت سیکیورٹی کونسل کی مستقل رکنیت حاصل کرنے کے اہل نہیں،ہمیں کشمیری سیاسی قیدیوں کے بارے میں بھی گہری تشویش ہے،ضروری ہے ان کے حقوق کا تحفظ کیا جائے اور فوری رہا کیا جائے،پاکستان قازقستان کے ساتھ اپنے قریبی تعلقات کو برقرار رکھے گا،کاپ 27 میں سیلاب کی تباہ کاریوں کیلئے فنڈ مختص کرنے کے فیصلے سے نقصان کا ازالہ کرنے میں مدد ملے گی، ترک صدر اردگان کے ساتھ وزیر اعظم مشترکہ طور پر استنبول شپ یارڈ میں پاک بحریہ کیلئے تیسرے پی این ایس خیبر کا افتتاح کریں گے۔ترجمان دفتر خارجہ ممتاز زہرا بلوچ نے ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہاکہ کاپ 27 میں سیلاب کی تباہ کاریوں کیلئے فنڈ مختص کرنے کے فیصلے سے نقصان کا ازالہ کرنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے کہاکہ ترکیہ کے صدر کی دعوت پر وزیراعظم محمد شہباز شریف 25 سے  26 نومبر کو ترکی کا دو روزہ سرکاری دورہ کریں گے،وزیراعظم محمد شہباز شریف دورہ ترکیہ کے دوران دوطرفہ ملاقاتیں کریں گے۔ ترجمان نے بتایاکہ ترک صدر اردگان کے ساتھ وزیر اعظم مشترکہ طور پر استنبول شپ یارڈ میں پاک بحریہ کیلئے تیسرے پی این ایس خیبر کا افتتاح کریں گے۔،دونوں رہنما دوطرفہ تعلقات، علاقائی صورتحال اور مشترکہ دلچسپی کے دیگر امور پر بھی بات چیت کریں گے۔انہوں نے کہاکہ وزیراعظم دورے کے دوران  ترک تاجر برادری کے رہنماؤں سے بات چیت بھی کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم ترکیہ میں ای سی او ٹریڈ اینڈ ڈویلپمنٹ بینک کے صدر سے بھی ملاقات کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان اور ترکیہ برادرانہ تعلقات سے لطف اندوز ہیں جو عقیدے، ثقافت اور تاریخ کی مشترکات میں گہرائی سے جڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ وزیراعظم محمد شہباز شریف اور وزیر خارجہ نے انڈونیشیا میں زلزلے سے ہونے والے نقصان پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ترجمان نے کہاکہ پاکستان بھارت کی جانب سے اقوام متحدہ سیکیورٹی کونسل میں دیے گئے بیان کو مسترد کرتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بھارت کے غیرذمہ دارانہ بیانات اس بات کا ثبوت ہیں کہ بھارت سیکیورٹی کونسل کی مستقل رکنیت حاصل کرنے کے اہل نہیں۔انہوں نے کہاکہ بھارت کے غیرقانونی زیر قبضہ جموں کشمیر میں بھارتی افواج کی جانب سے ظلم و بربریت جاری ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس ہفتے ایک اہم پیش رفت پاکستان اور جمہوریہ ڈومینیکن کے درمیان سفارتی تعلقات کا قیام ہے،اس سلسلے میں 18 نومبر 2022 کو نیویارک میں پاکستان اور ڈومینیکن ریپبلک کے مستقل نمائندوں نے ایک باضابطہ مشترکہ اعلامیہ پر دستخط کیے تھے۔ انہوں نے کہاکہ ہم سمجھتے ہیں کہ سفارتی تعلقات کے قیام سے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں اور باہمی دلچسپی کے شعبوں میں تعاون کی نئی راہیں کھلیں گی،ڈومینیکن ریپبلک کے ساتھ سفارتی تعلقات کا قیام دنیا بھر میں سفارتی تعلقات کو وسعت دینے کی ہماری کوششوں کا حصہ ہے۔ 

دفتر خارجہ

مزید :

صفحہ آخر -