پاکستان حالات کی بے رحم موجوں کے دھاروں میں بہہ رہا ہے، تابش الوری

پاکستان حالات کی بے رحم موجوں کے دھاروں میں بہہ رہا ہے، تابش الوری

  

 بہاول پور(بیورو رپورٹ)پاکستان حالات کی بے رحم موجوں کے دھاروں میں بہہ رہا ہے اور اہل سیاست اپنی اپنی کشتیوں میں ذاتی و جماعتی مفادات کی جنگ میں (بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

 مگن ہیں.اہل دانش حیران ہیں کہ ریاست کیلئے سیاست ہوتی ہے ہمارے ہاں سیاست کیلئے ریاست داؤ پر لگا دی گئی ہے.معروف پارلیمنٹیرئن اور دانشور سید تابش الوری تمغہ امتیاز مجلس ثقافت پاکستان کے زیر اہتمام ادبی پڑاؤ میں اظہار خیال کر رہے تھے انھوں نے کہا کہ بے بس اور بد حال لوگ منزل کی تلاش میں کبھی ایک طرف دوڑتے ہیں کبھی دوسری طرف!لیکن ہر نئے موڑ پر ایک نیا دھوکہ دیکھ کر مایوس ہو جاتے ہیں سید تابش الوری نے کہا کہ غربت کی لکیر سے نیچے زندگی بسر کرنیوالے لوگ چاہتے ہیں کہ انکے بھی حالات بدلیں وہ بھی خوشحالی کے دن دیکھیں مہنگائی اور بیروزگاری کا عذاب ٹلے اور صحت و تعلیم کی سہولتیں عام ہوں مگر ایسا محض خواہشوں سے ممکن نہیں اس مقصد کیلئے  ہر شخص کو قوم کی اصلاح سے پہلے اپنی اصلاح کرنی ہوگی اور اپنے ذاتی اطوار درست کرتے ہوئے ملک کیلئے اپنے آزمودہ صاحب کردار نمائندوں پر مشتمل ایک سچی مخلص اور محب وطن قومی  قیادت کا انتخاب کرنا ہوگا تاکہ ہم ترقی و خوشحالی کی وہ منزل پا سکیں جس کیلئے ہمارے عظیم شہیدوں نے اپنے زندہ خون کے نذرانے دئیے تھے شاعروں اور قلمکاروں کو اس حوالے سے قومی جذبے کی بیداری کیلئے اپنا رہنمایانہ کردار ادا کرنا ہوگا.تقریب کی صدارت سید تابش الوری نے کی جبکہ مہمان اعزاز ناصر عدیل اور عاطف نصیر تھے نظامت کے فرائض ریڈیو براڈ کاسٹر اشرف خان نے ادا کئے شعری نشست میں افضال ہاشمی ڈاکٹر کاظم عمار زیدی نحریر جاوید اے آر ساغر نحریر جاوید حفیظ گھو ٹیہ عاطف نصیر ناصر عدیل اور سید تابش الوری نے حصہ لیا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -