جندول،وزیراعلیٰ کا بلدیاتی  ناظمین کے احتجاجی دھرنے کا نوٹس

جندول،وزیراعلیٰ کا بلدیاتی  ناظمین کے احتجاجی دھرنے کا نوٹس

  

جندول(نمائندہ پاکستان)جندول  وزیر علی محمود خان بلدیاتی ناظمین کی احتجاجی دھرنے کا نوٹس،کئی پارٹی سرگرمیاں معطل،بلدیاتی ناظمین کی جدوجہد نے صوبائی حکومت کو بلدیاتی نمائندوں کی تمام مطالبات تسلیم کرنے کیلئے مذاکرتی ٹیم تشکیل دے دیاہے،بلدیاتی ناظمین نے دھرغیر معینہ مدت تک ملتوی،اعلی سطح حکومتی کمیٹی 15 دن میں مزاکرتی رپوٹ وزیر علی کو پیش کرینگے،مطالبات تسلیم ناکرنے کی صورت میں بلدیاتی ناظمین دوبارا احتجاج کی کال دئینگے،تحصیل مئیر سید احمد پاچہ اور ولیج ناظمین میڈیا سے گفتگو۔تفصیلات کے مطابق جندول لوئر دیر بشمول خیبرپختونخوا میں بلدیاتی ناظمین نے نامعلوم مدت تک 24 تاریخ کا احتجاجی درنا نامعلوم مددت تک ملتوی کردیااس حوالے سے گزشتہ روز جندل تحصیل ثمرباغ مئیر سید احمد باچہ کی سربرہی میں ایک ہنگامی اجلاس طلب کیا گیاجس میں تحصیل مئیر سید احمد باچہ نے اپنے کونسل ممبران کو صوبائی حکومت کے ساتھ بلدیاتی مشران کی مذاکراتی بات چیت سے اگاہ کردیاانہونے کہا کہ بلدیاتی ناظمین صبر وتحمل سے کام لئے،ہمارے بلدیاتی مشران صوبائی حکومت کی علی سطح کمیٹی کے ساتھ مزاکرات پر امادہ ہوگئے ہے جس میں امکان ہے کہ وزیر علی بلدیاتی ایکٹ کو بحال کرکے بلدیاتی نمائندوں کو ختیارات مل جائے گی،اس مقع پر اپوزیشن لیڈ عوامی نشنل پارٹی کی ولیج ناظم ہمایون خان نے کہا کہ حکومت کا شکرایا اد کرتے ہیں جس نے مزاکرات کا راستہ اختیار کیا،اس مقع پر ولیج ناظمین نے مطافقہ طور پر حکومت سے مطالبات تسلیم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت نے ہمارے مشران کی مطالبات تسلم نہں کیا تو انکے کال پر نامعلوم مددت تک احتجاجی درنا دیئنگے جس میں وزیر علی محمود خان کی گھر کا گیراو بھی شامل ہے،

مزید :

صفحہ اول -