اسماعیل تارا کا انتقال ، بیٹے نے نماز جنازہ کے وقت کا اعلان کر دیا

اسماعیل تارا کا انتقال ، بیٹے نے نماز جنازہ کے وقت کا اعلان کر دیا
 اسماعیل تارا کا انتقال ، بیٹے نے نماز جنازہ کے وقت کا اعلان کر دیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان کے معروف مزاحیہ اداکار اسماعیل تارا 73 برس کی عمر میں گزشتہ روز کراچی میں انتقال کر گئے ، ان کے بیٹے شیراز تارا کے مطابق نماز جنازہ آج بعد نماز جمعہ ادا کیا جائے گی ۔

نجی ٹی وی چینل "ایکسپریس نیوز "کے مطابق اسماعیل تارا گردوں کے عارضے میں مبتلا تھے اور کچھ دن سے نجی ہسپتال میں زیر علاج تھے، جمعرات کی صبح ہی انہیں وینٹی لیٹر پر منتقل کیا گیا تھا ،لیکن پھر  بھی ان کی حالت سنبھل نہ سکی اور وہ اپنے خالق حقیقی سے  جاملے، مرحوم کے پسماندگان میں بیوہ, 1 بیٹی اور 4 بیٹے شامل ہیں، اسماعیل تارا کے صاحبزادے شیراز تارا کے مطابق مرحوم کی نماز جنازہ آج بعد نماز جمعہ شہید ملت روڈ پر میمن پہاڑی والی مسجد میں اداکی جائے گی۔ 

 واضح رہے کہ سن 1949 ءکو لاہور میں پیدا ہونے والے اسماعیل تارا نے 1964 ءمیں فنکارانہ سفر شروع کیا،ویسے تو اسماعیل تارا نے کئی فلموں اور اسٹیج ڈراموں پر بہترین اداکاری کے جوہر دکھائے تھے مگر اسی کی دہائی میں طنز و مزاح کے مشہور ڈرامے ففٹی ففٹی میں ان کی لازوال اداکاری نے انہیں شہرت کی بلندیوں پر پہنچا دیا۔

اسماعیل تارا کو فلم" ہاتھی میرے ساتھی، منڈا بگڑا جائے، چیف صاحب "اور" دیواریں“ میں زبر دست اداکاری پر4 مرتبہ نگار فلم ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔مرحوم اداکار نے متعدد فلموں میں کام کیا، حالیہ دنوں میں اسماعیل تارا نےفلم" ڈونکی کنگ "میں کام کیا۔"ریڈی سٹیڈی نمبر "ان کی آخری فلم ثابت ہوئی۔

مزید :

تفریح -