برطانوی خاتون نے بچوں کے سکول میں جھوٹ بول کر چھٹیاں لیں اور سیر و تفریح پر بیرون ملک نکل گئی لیکن ایک چھوٹی سی غلطی سے پکڑی گئی 

برطانوی خاتون نے بچوں کے سکول میں جھوٹ بول کر چھٹیاں لیں اور سیر و تفریح پر ...
برطانوی خاتون نے بچوں کے سکول میں جھوٹ بول کر چھٹیاں لیں اور سیر و تفریح پر بیرون ملک نکل گئی لیکن ایک چھوٹی سی غلطی سے پکڑی گئی 

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک برطانوی خاتون پیسے بچانے کے لیے بچوں کے سکول میں ا ن کی بیماری کا جھوٹ بول کر انہیں چھٹیوں پر لے گئی مگرسکول والوں نے ایک ایسی چیز سے خاتون کا جھوٹ پکڑ لیا کہ اس نے سوچا بھی نہ تھا۔ میل آن لائن کے مطابق انٹرنیٹ پر خواتین کے فورم ’ممزنیٹ‘ پر اپنی شناخت مخفی رکھتے ہوئے اس خاتون نے خود ہی اس واقعے کی تفصیل بتائی ہے۔

خاتون اپنی پوسٹ میں لکھتی ہے کہ ”چونکہ چھٹیوں کے سیزن میں جہاز کے ٹکٹس سے ہوٹلوں کے کرائے تک ہر چیز مہنگی ہو جاتی ہے۔ چنانچہ میں نے پیسے بچانے کے لیے آف سیزن میں بیرون ملک چھٹیوں پر جانے پروگرام بنایا اور اس کے لیے بچوں کے سکول میں جھوٹ بول دیا کہ وہ بیمار ہیں اور سکول نہیں آ سکتے۔“

خاتون نے مزید لکھا کہ ”میں بچوں کو لے کر بیرون ملک چلی گئی اور اگلے دنوں سکول سے بچوں کی صحت کے متعلق دریافت کرنے کے فون کال کی گئی، جو میں نے ریسیو نہ کی اور ٹیکسٹ میسج کے ذریعے جواب دے دیا۔ جب ہم لوگ واپس آئے تو مجھے سکول سے ایک لیٹر ملا۔ سکول والوں نے میرا جھوٹ پکڑ لیا تھا اور اس حوالے سے مجھ سے وضاحت مانگی گئی تھی۔“

خاتون لکھتی ہے کہ ”سکول والوں نے لیٹر میں لکھا کہ جب انہوں نے مجھے کال کی تو انہیں انٹرنیشنل کالر ٹیون سنائی دی، جس کا صاف مطلب تھا کہ میں برطانیہ سے باہر ہوں۔میں نے کبھی اپنے بچوں کے سکول میں ان کی بیماری کا جھوٹ نہیں بولا ۔ اس بار نجانے میں نے کیوں ایسا کیا، جس پر میں بہت شرمندہ ہوں۔“ 

مزید :

برطانیہ -