گھریلو ملازمہ سے تعلق کے دوران کاروباری شخص کی ہارٹ اٹیک سے موت

گھریلو ملازمہ سے تعلق کے دوران کاروباری شخص کی ہارٹ اٹیک سے موت
گھریلو ملازمہ سے تعلق کے دوران کاروباری شخص کی ہارٹ اٹیک سے موت
سورس: File

  

بنگلورو (ڈیلی پاکستان آن لائن)  بھارتی ریاست کرناٹک کے دارالحکومت  بنگلورو میں مقیم ایک 67 سالہ تاجر اپنی گھریلو ملازمہ سے تعلق کے دوران حرکتِ قلب بند ہونے سے جان کی بازی ہار گیا۔ اس کی لاش پولیس کو ویرانے سے ملی ، اس شخص کی شناخت بالسوبرامنین کے طور پر ہوئی ہے۔

پولیس کے مطابق کاروباری شخص اپنی گھریلو ملازمہ کے گھر گیا تھا جہاں تعلق کے دوران اسے دل کا دورہ پڑا۔ اس شخص کے کال ریکارڈ نے   ثابت کیا کہ وہ ماضی میں بھی  کئی بار گھریلو ملازمہ کے گھر آتا رہتا تھا۔اہل خانہ کے مطابق ان کا حال ہی میں انجیوگرام کرایا گیا تھا۔ اس کے گھر والوں نے بتایا کہ واقعے کے دن وہ گھر سے یہ کہہ کر نکلا تھا کہ اسے کوئی ذاتی کام ہے۔

این ڈی ٹی وی کے مطابق جب اس شخص کی موت ہوئی تو ملازمہ گھبرا گئی اور اس ڈر سے کہ کہیں اس پر قتل کا مقدمہ نہ درج کردیا جائے، اس نے اپنے شوہر اور بھائی کی مدد سے اس کی لاش کو ویرانے میں پھینک دیا۔پولیس نے خاتون، اس کے شوہر اور اس کے بھائی کے خلاف تعزیرات ہند کی متعدد دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -