آئی ایم ایف کی جانب سے آئندہ برس سے مہنگائی کی خبروں پر تشویش ہے

آئی ایم ایف کی جانب سے آئندہ برس سے مہنگائی کی خبروں پر تشویش ہے

لاہور (کامرس رپورٹر)پاکستان انڈسٹریل اینڈ ٹریڈرز ایسوسی ایشنز فرنٹ (پیاف) نے آئی ایم ایف کی جانب آئندہ برس سے مہنگائی کی خبروں پر تشویش کا اظہار کیا ہے ۔چیئرمین پیاف عرفان اقبال شیخ نے وائس چیئر مین تنویر احمد صوفی اور خواجہ شاہ زیب اکرم کے ہمراہ ایک پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے کہا کہ عالمی مالیاتی ادارے کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق عالمی سطح پر پٹرولیم اور خام مال کی قیمتیں بڑھنے کے باعث صنعتی و زرعی اشیاء کی پیداواری لاگت بڑھنے کے واضح امکانات ہیں۔ چیئرمین پیاف عرفان شیخ نے کہا ایسی صورتحال میں حقیقی مہنگائی کے ساتھ ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کے تحت مصنوعی مہنگائی روکنے کے لئے وفاقی اور صوبائی حکومتوں پر ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ صارفی اشیاء اور بالخصوص صنعتی اشیاء کی قیمتوں پر مناسب چیک اینڈ بیلنس رکھیں۔ قیمتوں میں معمولی سا اضافی بھیmultiple effect کے باعث پیداواری لاگت کو بڑھا دیتا ہے جس سے لوکل اور انٹرنیشنل آڈرز پورے کرنے مشکل ہو جاتے ہیں۔ عرفان اقبال شیخ نے موجودہ معاشی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے انحوں نے کہاکہحکومت کی معاشی پالیسیوں کی بدولت ملکی زرمبادلہ کے ذخائربڑھ رہے ہیں ملکی زرمبادلہ کے ذخائر24.5 ارب ڈالر کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکے ہیں۔ اور پاکستان نے اب غیر ملکی اداروں سے مزید قرضے نہ لینے کا احسن فیصلہ کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ غیر ملکی زرمبادلہ کے مجموعی ذخائر میں سے19.5ارب ڈالر سٹیٹ بنک آف پاکستان اور 5ارب ڈالر کمرشل بنکوں کے پاس ہیں۔ سی پیک منصوبہ کی تکمیل اورملک میں نئے انڈسٹریل زونز کے قیام اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کو مراعات اور مفت اراضی کی فراہمی و ساز گار حالات کے باعث ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری بھی بڑھ رہی ہے۔

مزید : کامرس