انکوائری مکمل ہوئے بغیراو ایس ڈی افسران کو اعلیٰ عہدہ دے دیا گیا

انکوائری مکمل ہوئے بغیراو ایس ڈی افسران کو اعلیٰ عہدہ دے دیا گیا

لا ہور (شعیب بھٹی ) چینی انجینئرز کو تشدد کا نشانہ بنانے پر او ایس ڈی بننے والے سی پی او ملتان اور سابق ڈی پی او مظفر گڑھ کے روئیے سے دلبر داشتہ ہو کر خود سوزی کرنے والی خاتون کے کیس کے سلسلہ میں او ایس ڈی بننے والے سابق ڈی پی اوا کو انکوائریاں مکمل ہونے سے قبل ہی آئی جی پنجاب مشتاق احمد سکھیرا نے نوازتے ہوئے اعلیٰ سیٹوں پر تعینات کر دیا جبکہ نچلہ عملہ افسران کے دفاتروں میں انکوائریاں بھگتنے لگا۔ ذرائع کے مطابق دو سال قبل ضلع مظفر گڑھ کے نواحی علاقہ میں آمنہ نامی خاتون سے ملزمان نے بد اخلا قی کی ، مذکورہ خاتون ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کروانے تھانے پہنچ گئی تھانے سے انصاف نہ ملنے پر ڈی پی او آفس گئی جہاں سابق ڈی پی او مظفر گڑھ ایس ایس پی عثمان اکرم گوندل نے خانہ پوری کرتے ہوئے واپس تھانے بھیج دیا ،خاتون کی جانب سے خود سوزی کی دھمکی پر تھانہ میر خضر میں ملزمان کے خلاف آمنہ بی بی کی مدعیت میں مقدمہ درج تو کرلیا گیا مگر پولیس نے ملزمان سے مبینہ طو ر پر سازباز کرکے ان کو کھلا چھوڑ دیا ، خاتون ایک بار پھر داد رسی کے لئے ڈی پی او آفس پہنچ گئی مگر سابق ڈی پی او عثمان اکرم گوندل نے خاتون کی داد رسی کرنے کی بجائے اس کو اپنے دفتر سے نکال دیا جس پر خاتون نے ڈی پی او کے روئیے سے دلبر داشتہ ہو کر خود پر تیل چھڑک کر آگ لگا لی خاتون ہسپتال میں دم توڑ گئی واقعہ کا وزیر اعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیا تو ڈی پی او عثمان اکرم گوندل کو او ایس ڈی کر دیا گیا جبکہ ڈی ایس پی لطیف کانجو، ایس ایچ او رائے شاہد ، ایک درجن سے زائد اہلکاروں کے خلاف ، ایڈیشنل آئی جی انویسٹی گیشن برانچ پنجاب خالد داد خان لک کی انکوائری رپورٹ کے بعد دہشت گردی سمیت دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا ، دو ماہ قبل ملتان شہر میں موٹر وے کے قریب چینی انجینیرز کو ملتان کی پولیس نے تشدد کا نشانہ بنایا واقعہ کا علم ہونے پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے سی پی او ملتان اظہر اکرم کو او ایس ڈی کر دیا ، ذرائع کا کہنا ہے کہ ان دونوں افسران کے خلاف محکمانہ انکوائریوں کا حکم دیا گیا تھا مگر انکوائریاں مکمل ہونے سے قبل ہی اظہر اکرم کو ایس ایس پی موٹر ٹرانسپورٹ پنجاب کی پرکشش سیٹ پر تعینات کر دیا گیا جبکہ ایس ایس پی عثمان اکرم گوندل کو ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ تعینات کر دیا ہے ۔جبکہ ڈی ایس پی لطیف کانجو، ایس ایچ او رائے شاہد ، ایک درجن سے زائد اہلکارتاحال انکوائریاں بھگت رہے ہیں ۔

مزید : علاقائی


loading...