ترکی، گولن سے رابطوں کا الزام، ہزاروں افراد زیر حراست

ترکی، گولن سے رابطوں کا الزام، ہزاروں افراد زیر حراست

انقرہ (این این آئی)ترکی کے وزیر انصاف نے کہاہے کہ فتح اللہ گولن کے ساتھ رابطوں اور تعلقات کے الزام میں 35ہزار سے زائد مشتبہ افراد زیر حراست ہیں،مزید 4ہزار کے قریب مشتبہ افراد کی تلاش جاری ہے، جبکہ عدلیہ کے احکامات پر گرفتار افراد میں 26ہزار کو رہا بھی کیا جاچکا ہے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق میڈیاکو جاری کیے گئے ایک بیان میں ترک وزیر باقر بوزدگ نے کہا کہ مزید 4ہزار کے قریب مشتبہ افراد کی تلاش جاری ہے، جبکہ عدلیہ کے احکامات پر گرفتار افراد میں 26ہزار کو رہا بھی کیا جاچکا ہے۔انہوں نے بتایا کہ ناکام بغاوت میں ملوث 35ہزار افراد اس وقت زیر حراست ہیں۔ فوجی بغاوت کی ناکامی کے بعد سے لیکر اب تک 82ہزار سے زائد افراد سے تحقیقات کی گئی ہیں۔انہوں نے ترکی کے مغربی علاقے میں ایک کانفرنس سے خطاب کے دوران مزید بتایا کہ ناکام بغاوت کے بعد ہزاروں فوجیوں اور سرکاری حکام اور اہلکاروں کو ملازمتوں سے برطرف بھی کیا گیا ہے۔

مزید : عالمی منظر