لیبیا:تارکین وطن کی کشتی پرفوج کا حملہ، 4ہلاک،120کو بچالیاگیا

لیبیا:تارکین وطن کی کشتی پرفوج کا حملہ، 4ہلاک،120کو بچالیاگیا

طرابلس(این این آئی)لیبیا کی بحری فوج نے ایک امدادی تنظیم کی جانب سے عاید کردہ اس الزام کی تردید کی ہے جس میں اس نے کہا ہے کہ ایک لیبی اہلکار نے بحر متوسط میں تارکین وطن کی ایک کشتی پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں اس کشتی میں سوار بعض افراد سمندر میں گر گئے اور ان میں سے چار ڈوب مرے جبکہ متعدد لاپتا ہوگئے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق طرابلس میں بحریہ کے ترجمان ایوب قاسم نے ایک بیان میں کہا کہ ایک اہلکار اس کشتی پر یہ د یکھنے کے لیے سوار ہوا کہ وہ لیبیا کے پانیوں میں کیوں رواں دواں ہیجبکہ جرمنی سے تعلق رکھنے والی ایک غیر سرکاری تنظیم سی واچ کا کہنا تھا ایک تیز رفتار کشتی ان کی تارکین وطن سے بھری کشتی کی جانب آگئی اس پر لیبی کوسٹ گارڈ کا نشان تھا۔سی واچ کے ترجمان نے کہا تھا کہ لیبی بحریہ کی کشتی سے ایک شخص اس ربر کی کشتی پر سوار ہوگیا اور اس نے تارکینِ وطن کو ایک چھڑی سے پیٹنا شروع کردیا اس سے افراتفری پھیل گئی اور کشتی ہچکولے کھانے لگ گئی جس سے متعدد افراد سمندر میں جا گرے، سی واچ کا کہنا تھا کہ اس نے سمندر سے چار نعشیں نکال لی ہیں لیکن اس نے بعض دوسرے افراد کو بھی ڈوبتے ہوئے دیکھا لیکن انھیں نہیں بچایا جاسکا،ربر کی کشتی پر قریبا ڈیڑھ سو افراد سوار تھے اور ان میں سے ایک سو بیس کو بچا لیا گیا ہے چار ہلاک اور باقی لاپتا ہوگئے ۔

مزید : عالمی منظر