عرب اتحادی فوج نے مآرب میں بیلسٹک میزائل مار گرایا

عرب اتحادی فوج نے مآرب میں بیلسٹک میزائل مار گرایا

صنعاء(این این آئی)سعودی عرب کی قیادت میں یمن میں آئینی حکومت کی بحالی اور سرکاری اداروں پر ایران نواز باغیوں کے قبضے کے خاتمے کے لیے جاری آپریشن کے دوران باغیوں کے متعدد ٹھکانوں پر فضائی حملے دوبارہ شروع کردیے گئے۔ ادھر یمن کے صوبہ مآرب کی طرف داغے گئے ایک بیلسٹک میزائل کو بھی فضاء ہی میں مار گرایا گیا ۔صعدہ گورنری میں مزاحمتی فورسز اور سرکاری فوج نے باغیوں کے زیرقبضہ متعدد دیہات پر قبضہ کرلیا جب کہ البقع گورنری میں باغیوں کے اسلحہ کے گوداموں سے بھاری مقدار میں اسلحہ، گولہ بارود اور میزائل قبضے میں لیے گئے ۔عرب ٹی وی کے مطابق یمنی حکومت کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ حوثی باغیوں کی جانب سے مآرب کی طرف بیلسٹک میزائل داغا گیا تھا مگر اتحادی فوج نے میزائل کو ہدف تک پہنچنے سے پہلے ہی مار گرایا ۔عہدیدار کے مطابق حوثی باغیوں کے ٹھکانوں پر اتحادی فوج نے بمباری شروع کردی تھی۔ یہ بمباری اس وقت شروع کی گئی تھی جب حکومت اور اقوام متحدہ کی طرف سے کی گئی تین روزہ جنگ بندی کی مہلت ختم ہوگئی تھی۔حکومتی ذریعے کا کہناتھا کہ اقوام متحدہ کے امن مندوب اسماعیل ولد الشیخ احمد کی طرف سے 72 گھنٹے کی جنگ بندی کا اعلان کیا گیا تھا مگر عملا یمن میں کوئی جنگ بندی نہیں ہوئی۔

یمنی باغیوں کی طرف سے جنگ بندی کی خلاف ورزیاں جاری رہی ہیں۔ اس دوران سعودی عرب کے اندر بھی گولہ باری کی گئی جس پر سعودی سیکیورٹی فورسز نے یمنی باغیوں کو بھرپور جواب دیا۔ادھر یمنی فوج کے سربراہ جنرل محمد علی المقدشی نے جنگ بندی کی ناکامی کی ذمہ داری حوثیوں پر عاید کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ مآرب میں میزایل حملہ اور تعز میں نہتیشہریوں پر گولہ باری جیسے واقعات نے ثابت کیا ہے کہ حوثی باغی اور مں حرف سابق صدر علی صالح جنگ بندی کے معاہدے پر کار بند نہیں رہے۔انہوں نے کہا کہ یمنی فوج نے جنگ بندی کی تین روزہ مہلت کے دوران حتی الامکان صبرو تحمل کا مظاہرہ کیا مگر حوثی باغیوں کی طرف سے جنگ بندی کی 1400 بار خلاف ورزی کی گئی۔ادھر جنگ بندی کی مہلت ختم ہونے کے بعد عرب اتحادی فوج نے یمن میں حوثیوں کے مختلف شہروں میں مراکز پر بمباری شروع کی ۔

اطلاعات کے مطابق اتحادی فوج نے معسکر الخفا، جبل نقم، مشرقی صنعا اور جنوب میں النھدین اور شمالی صنعاء میں الدیلیمی فوجی اڈے پر بم برسائے ۔مغربی مآرب میں حوثیوں کی بھیجی جانے والی کمک اور صرواح محاذ کے قریب بھی باغیوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا کر انہیں تباہ کیا گیا۔شمال مغربی یمن کی حج گورنری اورجنوب میں عبس ڈاریکٹوریٹ کے ساتھ ساتھ پھیلی ساحلی پٹی پر باغیوں کے کئی ٹھکانے تباہ کیے گئے۔شمالی صنعاء میں باقم اور سعودی عرب کے جنوبی علاقے ظہران سے متصل ساحلی علاقوں میں باغیوں کے کئی ٹھکانے تباہ کیے گیے۔ تعز گورنری کے مشرقی علاقے الحوبان میں باغی ملیشیا کیدو ٹھکانوں پر بمباری کی گئی۔الجوف گورنری میں المصلوبشہر میں تین مقامات پراور الحدیدہ میں الکثیب کے مقام پر چار مقامات پر باغیوں کے ٹھکانوں کو بمباری سے تباہ کیا گیا۔ دوسری جانب حوثی ملیشیا اور مں حرف سابق صدر علی عبداللہ صالح کی وفادار فورسز نے شبواگورنری کے الصفراء علاقے اور بیجان محاذ پر وحشیانہ گولہ باری کی۔ صعدہ گورنری میں مزاحمتی فورسز اور سرکاری فوج نے باغیوں کے زیرقبضہ متعدد دیہات پر قبضہ کرلیا جب کہ البقع گورنری میں باغیوں کے اسلحہ کے گوداموں سے بھاری مقدار میں اسلحہ، گولہ بارود اور میزائل قبضے میں لیے گئے ۔

مزید : عالمی منظر