احتجاج کرنا ہرکسی کا حق ہے مگر کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کا حق نہیں :مراد علی شاہ

احتجاج کرنا ہرکسی کا حق ہے مگر کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کا حق نہیں :مراد علی ...

کراچی(آن لائن) وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ احتجاج کرنا ہر کسی کا حق ہے لیکن کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کا حق نہیں، پولیو موذی مرض ہے وفاقی اور صوبائی حکومت مل کر اس کا خاتمے کرنا چاہتے ہیں،کراچی کے22 لاکھ بچوں کوپولیوسے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے۔کراچی میں انسداد پولیو مہم کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی جمہوری اقدار کو برقرار رکھنا چاہتی ہے، ہم اپنے شہیدوں پر ناز کرتے ہیں، احتجاج کرنا ہر کسی کا حق ہے لیکن قانون ہاتھ میں لینے کا حق نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اب تک صوبائی مالیاتی کمیشن کی تشکیل نہیں ہوسکی جس کے باعث بلدیاتی اداروں کو مالی مسائل درپیش ہیں، جلد ہی صوبائی مالیاتی کمیشن بنایا جائے گا۔وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ اسپتالوں میں طبی و غیر طبی عملے اور ڈاکٹرز کی کمی سے متعلق خامیاں ختم کرنا چاہتے ہیں، صوبے بھر میں بھرتیوں پر سے پابندی اٹھا لی گئی ہے، 3 سے 6 ماہ میں پیرامیڈیکل اسٹاف کی کمی ختم کی جائے گی۔مراد علی شاہ نے کہا کہ پولیو موذی مرض ہے اور ہمیں اس کاخاتمہ کرنا ہوگا، وفاقی اور صوبائی حکومت مل کر پولیو کا خاتمے کرنا چاہتے ہیں، مہم کے دوران صوبے بھرکے 83 لاکھ بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا ہے جبکہ کراچی کے22 لاکھ بچوں کوپولیوسے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے، اس کے لیے 46 ہزار ورکرز کام کررہے ہیں۔ والدین سے درخواست ہیکہ 5 سال تک کے بچوں کو پولیو کے قطرے ضرور پلائیں۔ انہوں نے کہا کہ لوگوں کا اعتراض تھا پولیو ویکسین درست نہیں، لیڈی ہیلتھ ورکرزکو پولیو ویکسین کے رنگ سے متعلق بھی تربیت دی ہے کیونکہ اگر پولیو ویکسین کا رنگ تبدیل ہوجائے تو وہ مؤثر نہیں رہتی۔

مزید : علاقائی


loading...