انگلی ہماری طرف کیوں اٹھتی ہے ؟قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں عمران اور اعتزاز کی جماعتوں کے وزرائے اعلیٰ بھی موجود تھے :پرویز رشید

انگلی ہماری طرف کیوں اٹھتی ہے ؟قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں عمران اور ...

کراچی(اے این این )وفاقی وزیراطلاعات پرویز رشید نے کہاہے کہ اکتوبر وزرائے اعظم کے خلاف سازشوں کا مہینہ ہے اور یہ سلسلہ 1951سے جاری ہے ، دھرنے کی سیاست وہ لوگ کرنا چاہتے ہیں جوترقی نہیں چاہتے،عمران خان کو سپریم کورٹ پر اعتماد ہے تو پھر عدالت کے فیصلے کا انتظار کریں ، عدالت کا فیصلہ ہمارے خلاف آیا تو ماننے میں ایک لمحہ نہیں لگائیں گے جبکہ سڑکوں پر کئے جانے والے فیصلہ نہیں مانیں گے،جس اجلاس کی باتیں افشا ہوئیں اس میں عمران خان اور اعتزاز احسن کی پارٹیوں کے وزرائے اعلی بھی موجود تھے ،انگلی ہماری طرف کیوں اٹھتی ہے ؟ ،ا یم کیو ایم پر پابندی لگانے کا فیصلہ اکیلے نہیں کر سکتے۔وزیر اطلاعات پرویز رشید کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں مرحوم امجد صابری کے گھر پہنچے اوران کی بیوہ کو ایک کروڑ روپے کا چیک دیا۔ بعد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نے وعدہ کیا تھا وہ پورا کرنے آیا ہوں ۔ امجد صابری کی بیوہ کے لئے ایک کروڑ روپے چیک دے دیا ہے تاہم رقم امجد صابری کا متبادل نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اکتوبر کا مہینہ وزرائے اعظم کے خلاف سازشوں کا مہینہ ہے اور یہ سلسلہ 1951سے جاری ہے، ان محلاتی سازشوں کا حصہ عمران خان بھی بن چکے ہیں ان کی سازشوں کے تانے بانے سی پیک کو روکنے والوں اور دہشت گردی کے خلاف جنگ کے مخالفین سے ملتے ہیں عمران خان حکومت کے خلاف کوئی محاذ کھڑا کرتے ہیں تو بارڈر پر گولہ باری شروع ہوجاتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ سپریم کورٹ کی جانب سے تمام فریقین کو نوٹسز جاری کئے گئے ہیں جن میں وزیراعظم نوازشریف اور عمران بھی شامل ہیں وزیراعظم نے اس نوٹس کا خیر مقدم کیا عدالت عظمیٰ کی جانب سے نوٹس جاری ہونے کے بعد دھرنے کا کوئی جواز نہیں رہ جاتا سڑکوں پر فیصلے پاکستان کے خلاف ہیں یہ فیصلے عدالت میں ہونے چاہیے اگر عمران خان عدالت کا احترام اور بھروسہ کرتے ہیں تو پھر انتظار کریں۔ انہوں نے کہاکہ عمران خان کو اعلی عدلیہ کے فیصلے کا احترام کرنا ہوگا اگر فیصلہ ہمارے خلاف ہوا تو ہم اسے تسلیم کریں گے اور اگر عدالت ہمارے حق میں فیصلہ دے گی تو ہم عمران خان سے معافی کا بھی مطالبہ نہیں کریں گے انہیں صرف شرمندگی کا اظہار کرنا ہوگا۔وفاقی وزیر نے کہاکہ اسلام آباد کے شہری حکومت سے مطالبہ کررہے ہیں کہ ہماری زندگی کو مفلوج ہونے سے بچایا جائے اور خلل نہ پڑنے دیا جائے حکومت کا فرض ہے وہ وفاقی دارالحکومت میں معمولات زندگی جاری رکھے اور ملک میں موجود قانون میں مداخلت کرنے والوں کو روکا جائے حکومت کارسرکار میں مداخلت کرنے والوں کو قانون کے ذریعے ہی روکے گی۔ پرویز رشید نے کہا کہ قومی سلامتی اجلاس میں ہونے والی باتوں کے افشا ہونے کی تحقیقات جاری ہیں اس اجلاس میں پیپلزپارٹی اور پی ٹی آئی کے وزرائے اعلی بھی موجود تھے لیکن اعتزاز احسن اور عمران خان کی جانب سے انگلیاں صرف ہماری طرف ہی اٹھتی ہیں اگر ان کے پاس کوئی ثبوت ہیں تو عدالت میں جائیں۔ ایم کیو ایم پاکستان کے حوالے سے پرویز رشید نے کہاکہ کسی ایک فرد کے گناہ کی سزا پوری سیاسی جماعت کو نہیں دی جاسکتی 2018 کے عام انتخابات میں کراچی کے عوام خود فیصلہ کرلیں گے کہ کون حق پر ہے۔ا یم کیو ایم پر پابندی لگانے کا فیصلہ اکیلے نہیں کر سکتے۔

مزید : صفحہ اول