پراپرٹی ڈیلرز کی احتجاجی ریلی اور دھرنے کی جھلکیاں

پراپرٹی ڈیلرز کی احتجاجی ریلی اور دھرنے کی جھلکیاں

لاہور(میاں اشفاق انجم سے)ڈی ایچ اے اسٹیٹ ایجنٹس ایسوسی ایشن لاہور کے صدر میجر رفیق حسرت اور دیگر ایسوسی ایشنز کے رہنماؤں کی قیادت میں پراپرٹی ڈیلرز کی تاریخ کی سب سے بڑی اور طویل ریلی جس سے کاروبار زندگی کے ساتھ ساتھ لاہور کی ٹریفک کئی گھنٹے جام ر ہی ۔* ڈیفنس چوک سے شروع ہونے والی ریلی میں فےئر اینڈ لائل گروپ،یونٹی گروپ،الخدمت گروپ اپنے اپنے جلوسوں کی صورت میں شریک ہوئے ،راولپنڈی سے آئے ہوئے درجنوں ڈیلرزنے لبرٹی گول چکر پر ریلی کا استقبال کیا۔*جوہر ٹاون،ایل ڈی اے ایونیو ایسوسی ایشن ،لیک سٹی ،ڈی ایچ اے رہبرکی ایسوسی ایشن،جیل روڈ پر استقبالیہ کیمپ لگا کر شریک ہوئیں۔*بحریہ ٹاون،واپڈا ٹاون ،ڈی ایچ اے کے رئیل اسٹیٹ ایجنٹس نے علیحدہ علیحدہ نا منظور نا منظور ٹیکسز میں اضافہ نامنظور کے فلیکس بنا رکھے تھے ۔*سینکڑوں موٹر سائیکل اور درجنوں کاروں کو خوبصورت سٹیکر ، فلیکس،بینر سے ڈیلرز نے سجا رکھا تھا ۔*تین بڑے ٹرکوں پر سپیکر لگائے گئے تھے ایک پر ڈی ایچ اے لاہور،کراچی،اسلام آباد،پشاور،راولپنڈی کے رہنما سوار تھے،دوسرے ٹرکوں میں بحریہ ٹاون ،ڈی ایچ اے رہبر،جوہر ٹاون کے رہنما شریک تھےْ ۔*مین بلیوارڈ گلبرگ سے احتجاجی ریلی جب شادمان کی طرف مڑنے لگی تو ضلعی انتظامیہ نے ہاتھ جوڑ دئیے سارے شہر کا نظام ڈسٹرب ہو گیا ہے آپ مال روڈ پر نہر سے چلے جائیں یہ مطالبہ رہنماوں نے تسلیم کر لیا اور کہاہمارا مقصد بالکل شہریوں کو تنگ کرنے کا نہیں ہے ہم اپنے مطالبات کے لیے نکلے ہیں ۔*اسمبلی ہال کے باہر دھرنے کے دوران سی سی پی او اور دیگر افراد بار بار میجر رفیق حسرت کو علیحدہ ملاقات کے لیے لیجانے کی کوشش کرتے رہے جسے حاجی زاہد اور دیگر رہنماوں نے انکار کیا اور کہا جو کہنا ہے وہ سب کے سامنے کہیں۔*پرویز ملک کی قیادت میں مسلم لیگی رہنماوں کی طرف سے رات گئے ٹیکسز کی واپسی اور وزیر خزانہ سے مذاکرات اور نوٹیفکشن جاری کرنے کی یقین دہانی پر دھرنا ختم کیا گیا۔*دھرنے کے دوران ایک پراپرٹی ڈیلرز کی طرف سے عمران خان کے2نومبر کے دھرنے میں شرکت کے اعلان نے ہلچل پیدا کی تب مسلم لیگی قیادت مذاکرات کے لیے میدان میں آ گئی۔

مزید : صفحہ اول