اپ گریڈٹرینوں کی نشستوں میں کھٹمل کی بھرمار،مسافر اذیت میں مبتلا

اپ گریڈٹرینوں کی نشستوں میں کھٹمل کی بھرمار،مسافر اذیت میں مبتلا

لاہور(محمد نواز سنگرا) محکمہ ریلوے کی اپ گریڈ کی جانیوالی ٹرینوں میں صفائی کے ناقص انتظامات کے باعث ٹرینوں کی نشستیں مسافروں کے لئے عذاب بن گئیں ہیں اور ان میں کھٹملوں کی بھرمار پائی گئی ہے جبکہ ذرائع کے مطابق یہ صوتحال وفاقی وزیرریلوے کے علم میں بھی لائی جا چکی ہے ۔نشستوں میں کھٹمل موجود ہونے کے باعث مسافروں بالخصوص خواتین اور بچوں کا سفر کرنا محال ہو گیاہے۔ کئی ماہ سے ٹرینوں کی فومیگیشن نہ ہونے کہ وجہ سے کھٹمل سمیت دیگر خطر ناک حشرات کے کاٹنے سے کئی مسافر اذیت اور انفیکشن کا شکار ہو چکے ہیں۔تفصیلات کے مطابق محکمہ ریلوے نے مسافروں کو بہترین سفر ی سہولیات فراہم کرنے کیلئے 5ٹرینوں کو اپ گریڈ کیا تھا جس میں کھانے پینے کی سہولیات کو بہتر بنانے سمیت ایل سی ڈی،اے سی اور سیٹوں اور برتھ کے معیار بھی بہتربنا یا گیاتھا ۔ جن ٹرینوں کو اپ گریڈ کیا تھا ان میں کراچی ایکسپریس، تیزگام،خیبر میل ،قراقرم اور برنس ایکسپریس شامل ہیں۔ان ٹرینوں کی سیٹوں کی مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کے سبب ان مین بے شمار کھٹمل پیدا ہو چکے ہیں جس سے مسافروں کا سفر کرنا محال ہو گیا ہے اور رات کا سفر کرنے والے مسافر سو بھی نہیں سکتے۔اس حوالے سے روز نامہ پاکستان کی طرف سے چند ٹرینوں کا سروے کرنے پر مسافروں نے شکایات کے انبار لگا دئے۔ مسافروں کا کہنا ہے کہ کھٹملوں کی وجہ سے شدید پریشان ہیں جبکہ برتھ پر دیگر کیڑ ے مکوڑوں نے بھی پریشان کر رکھا ہے۔اس حوالے سے جب ٹرین منیجروں سے بات کی گئی تو انہوں نے اعتراف کرتے ہوئے شکایات کو درست قرار دیا اور کہا کہ وہ خود بھی متاثرین میں شامل ہیں مزید بتایا کہ کھٹمل کا مسئلہ سنجیدہ ہے جو وزیر ریلوے کے علم میں ہے۔ جو بھی شکایات آتی ہیں وہ متعلقہ حکام تک پہنچائی جاتی ہیں ایکشن لینا اعلیٰ حکام کا کام ہے۔چند مہینوں کے بعد 48گھنٹے کیلئے فومیگیشن(ٹرین کو دھواں اور ہیٹ دینا) ضروری ہوتا ہے جو نہیں دی جا رہی ۔ اس حوالے سے ڈپٹی سی ایم ای سی اینڈ ڈبلیو عدنان شافع سے بات کی گئی تو انہوں نے بتایا کہ ٹرینوں کی فومیگیشن کی جاتی ہے اور مزید کر رہے ہیں ۔کھٹمل کا مئلہ کئی بار وزیر ریلوے کے علم میں لایا ہے اوروہ با خبر ہیں ۔کوشش کر رہے ہیں کہ اس مسئلے کو حل کیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر