عمران خان مشرف کی بی ٹیم کا کردار ادا کرنے سے باہر نہیں نکل سکے ، کھوڑو

عمران خان مشرف کی بی ٹیم کا کردار ادا کرنے سے باہر نہیں نکل سکے ، کھوڑو

حیدرآباد(این این آئی)صوبائی وزیر خوراک و پارلیمانی امور اور پیپلزپارٹی سندھ کے صدر نثار کھوڑو نے کہا ہے کہ عمران خان اب تک پرویز مشرف کی بی ٹیم کا کردار ادا کرنے سے باہر نہیں نکل سکے ہیں اور وہ جمہوری حکومت کے مقابلے میں آمر مشرف کی حکومت کو بہتر کہتے ہیں، مشرف دور میں مصطفیٰ کمال کراچی کے بے تاج بادشاہ تھے اور انہیں سٹی ناظم کی حیثیت سے اربوں روپے کا بجٹ دیا گیا جو کہ وہ ہڑپ کر گئے۔وہ حیدرآباد پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے، اس موقع پر صوبائی مشیر اطلاعات مو لابخش چانڈیو اور صوبائی معاون خصوصی بابر آفندی بھی موجود تھے۔صوبائی وزیر نثار کھوڑو نے کہا کہ عمران خان تنہا ہوتے جارہے ہیں او ر اب تو طاہر القادری بھی ان کا ساتھ چھوڑ گئے ہیں، انہوں نے کہا کہ تعجب ہے کہ عمران خان ایک سیاستدان ہوتے ہوئے کہتے ہیں کہ دھرنے کے نتیجے میں اگر تیسری قوت آئے گی تو اس کی ذمہ داری نواز شریف کی حکومت پرہو گی، ایسے شخص کو تو سیاست کا حق ہی نہیں، انہوں نے کہا کہ عمران خان خود ہی عدالت جاتے ہیں اور پھر دھرنے کا بھی اعلان کرتے ہیں، عمران خان جذبات میں کئی باتیں کہہ جاتے ہیں اور پھر ان پر یوٹرن بھی لے لیتے ہیں، ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم مختلف گروپوں میں تقسیم ہو گئی ہے اسمبلی میں بیٹھے ایم پی ایز بھی قائد ایم کیو ایم الطاف حسین کو چھوڑ گئے ہیں کیونکہ ان ارکان اسمبلی کا یہ موقف ہے کہ انہوں نے جب الیکشن لڑا تھا تو ان کے منشور میں پاکستان مردہ باد نہیں بلکہ پاکستان زندہ باد تھا، گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد اور مصطفیٰ کمال کے ایک دوسرے پر الزامات سے متعلق سوال پر نثار کھوڑو نے کہا کہ مصطفی کمال اتنے عرصے سے یہ الزامات کیوں چھپائے ہوئے تھے مشرف دور میں مصطفی کمال کراچی کے بے تاج بادشاہ تھے بطور ناظم انہیں اربوں روپے کا بجٹ دیا گیا تھا ۔

مزید : صفحہ آخر