بونیر میں سڑک پر کام بند ہونے کیخلاف ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال

بونیر میں سڑک پر کام بند ہونے کیخلاف ٹرانسپورٹرز کی ہڑتال

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)سیاحتی مقام درہ گوکند کے چودہ کلومیٹر سٹرک پر جاری کام بند ہونے کے خلاف ٹرانسپورٹروں کا پہیہ جام ہڑتال۔علاقہ عوام اور مشران نے بھر پور ساتھ دیا۔سڑک علی الصبح بند کرکے دوپہر تک پورے دروہ گوکند کو جام کیے رکھا۔احتجاج کے مقام شگوبنٹر تک پہنچنے کے لیے سرکاری اھلکاروں اور سیاسی راھمناوں کو پہنچنے کے لیے کئی کلومیٹر پیدل جانا پڑا۔ٹرانسپورٹروں کے عہدیداران سیف الاسلام ،عابد ،حکیم خان،علاقہ مشران علی زر خان، سید مصطفی باچا،رحمت سراج،مولانا شیر علی حقانی ،حاجی فضل اکبر ،ایم پی اے مفتی فضل عفور،جماعت اسلامی امیر علام مصطفی،پی پی پی کے جوہر علی خان،پی ٹی ائی کے انعام الرحمان،نظام الملک،اے این پی کے افسر خان،میا ں سید لائیق باچا اور دیگر نے گوکند سڑک کے لیے منظور شدہ ساڈے چودہ کروڑ فنڈز میں صرف ایک کروڑ ریلیز کرنے اور مذید فنڈز جاری نہ کرنے کو علاقہ عوام کے ساتھ زیادتی قراردیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ سڑک پر کام وقت مقررہ پر مکمل کرنے کے لیے فنڈزھنگامی بنیادوں پر جاری کیے جائیں اور سردست سڑک پر بچھانے اور پانی چھڑکاو شروع کیا جائے تاکہ ٹرانسپورٹراران اور عوام کو سہولت فراھم کیا جاسکے۔ٹرانسپوٹران اور علاقہ مشران نے دھمکی دی ہے اگر مطالبات پر دو دن کے اندر عمل درامد نہ ہوا تو ڈگر ھیڈ کوارٹر کے مقام پر مرکزی شاہراہ کو بند کردیا جائے گا۔جس کی تمام تر زمداری انتظامیہ پر ہوگی۔اس موقع پر ایم پی اے مفتی فضل عفور نے کہاہے کہ سڑک کے لیے منظور شدہ فنڈز ریلیز کرنے کے سلسلے میں کئی بار وزیر اعلیٰ سے ملاقات کرچکاہے اور اسمبلی فلور پر باربار اواز بھی اٹھایا ہے ۔اور اپنے حلقہ کے عوام کے ساتھ ڈگر پل سے پشاور تک ہر احتجاج میں برابر ساتھ دونگا۔جبکہ انعام الرحمن نے وزیر اعلیٰ اور علام مصطفی نے وزیر خزانہ سے علاقہ مشران کے لیے ملاقات کا وقت لینے کی یقین دھانی کرائی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...