چار سدہ، تحصیل کونسل کا اجلاس، ممبران کی شہر کی ابتر صورتحال پر تشویش

چار سدہ، تحصیل کونسل کا اجلاس، ممبران کی شہر کی ابتر صورتحال پر تشویش

چارسدہ ( بیورورپورٹ) تحصیل کونسل چارسدہ کا ہنگامہ خیز اجلاس ۔ممبران کا شہر میں امن و امان کی ابتر صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار ۔ ریاستی اداروں کے افسران اپنا قبلہ درست کریں ۔ ٹاؤن ہال کو فوری طور پر واگزار کراکے ٹی ایم اے کے ؁حوالے کیا جائے ۔ سیکورٹی خدشات کے پیش نظر بند کیا گیا پریس کلب روڈ فور ی طور پر عوام کے آمد و درفت کیلئے کھول دیا جائے ۔ اسلامیہ کالج انتظامیہ چارسدہ کا کوٹہ بحال کریں بصورت دیگر چارسدہ کے عوام کا عطیہ شدہ 1200جریب اراضی واپس کی جائے ۔ تفصیلات کے مطابق تحصیل کونسل کا ہنگامہ خیز اجلاس زیر صدارت سپیکر ڈاکٹر الطاف منعقد ہوا۔ اجلاس میں تحصیل ناظم خلیل بشیر خان عمرزئی ، اپوزیشن لیڈر خیر محمد ، ٹیم ایم او فحرالاسلام ، طارق خٹک اور تحصیل ممبران نے شرکت کی ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ممبران کرامت شاہ ، معرفت شاہ ، صمد باچہ ، اعظم جان ، ہارون خان اور دیگر نے چارسدہ شہر اور دیگر علاقوں میں امن و امان کی ابتر صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ عوام کی جان و مال محفوظ نہیں اور شدید بد امنی کی وجہ سے عوام میں خوف و ہراس کاعالم ہے ۔ سرکاری اداروں کے افسران منتخب بلدیاتی نمائندوں سے تعاون نہیں کرتے جس کی وجہ سے عوام کے مسائل حل نہیں ہورہے ۔ آفیسر کلب پر پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے قبضہ جما رکھا ہے اور پولیس نے مال مقدمہ کی گاڑیاں آفیسر کلب میں کھڑی کر رکھی ہے ۔ آفیسر کلب ٹی ایم اے کی ملکیت ہے اس لئے فوری طور پر واگزار کرایا جائے ۔ پریس کلب روڈ کو سیکورٹی خدشات کی بناء پر بند کیا گیا ہے جس سے قاضی خیل اور گھڑی حمید گل کے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے ۔ اس لئے پریس کلب روڈ کو آمد و رفت کیلئے کھول دیا جائے ۔ اسلامیہ کالج کو چارسدہ کے عوام نے امداد کیلئے 1200جریب اراضی دی ہے ۔ اسلامیہ کالج کے انتظامیہ نے چارسدہ کے عوام کیلئے اسلامیہ کالج میں داخلوں اور بھرتیوں کے حوالے سے باقاعدہ کوٹہ مقرر کیا تھا مگر نامعلوم وجوہات کی بناء پر اب چارسدہ کا کوٹہ ختم کیا گیا ہے ۔اسلامیہ کالج کی انتظامیہ کوٹہ بحال نہیں کرتی تو چارسدہ کے عوام کو 1200جریب اراضی واپس دی جائے تاکہ اسے چارسدہ کے عوام کے دیگرفلاح و بہبود کیلئے استعما کیا جائے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...