معاملات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں تو دھرنے کا کیا جواز ہے، رفیق رجوانہ

معاملات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں تو دھرنے کا کیا جواز ہے، رفیق رجوانہ

بہاولپور‘ میلسی ( بیورورپورٹ‘نامہ نگار)گونر پنجاب محمد رفیق رجوانہ نے کہا ہے کہ شہر بند کرنے سے تعمیر و ترقی کا عمل رک جاتا ہے ۔شہر کھلے رہیں گے تو تعمیر وترقی کے ثمرات سے شہریوں کو بہرہ مند کیا جا سکے گا۔ جو صاحبان عدالت میں گئے ہوئے ہیں اور معاملات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں تو قوم یہ پوچھنے(بقیہ نمبر6صفحہ12پر )

کا حق رکھتی ہے کہ دھرنے دینے اور شہر بند کرنے کا کیا جواز ہے۔یہ بات انہوں نے سرکٹ ہاؤس بہاول پور میں اراکین اسمبلی، منتخب بلدیاتی نمائندگان اور مسلم لیگی کارکنان کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔اس موقع پرصوبائی وزیر امداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ، ایم این اے جاوید علی شاہ، مخدوم سید علی حسن گیلانی،مسز پروین مسعود بھٹی،ایم پی اے فوزیہ ایوب قریشی،حسینہ ناز،چیئر مین بہاول پورویسٹ مینجمنٹ کمپنی سمیع اللہ چوہدری،چوہدری محمود مجید،میاں شاہد اقبال،عقیل نجم ہاشمی،بلال بلوچ،تابش الوری،اکمل بھٹی،میاں مقبول جوئیہ، میر خلیل الرحمن، فرغام اشتیاق،شہاب ثاقب،شاہد عبد اللہ چوہدری اور مسلم لیگی عہدیداران وکارکنان موجود تھے۔گورنر پنجاب نے کہا کہ قوم یہ پوچھنے کا حق رکھتی ہے کہ اگر شہر بند ہونے سے ترقی ہوتی ہے تو پھر پورے ملک کے شہروں کو بند کر دینا چاہئے مگر ہمیں یاد رکھنا چاہئے کہ اگر شہر کھلے رہیں گے تو ترقی کا پہیہ رواں دواں رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ عوام نے حکومت کو 5سال کے لئے منتخب کیا ہے اور اس غیر یقینی صورتحال کے باعث تعمیر وترقی کا عمل متاثر ہو گا اور یہ عوام کا حق ہے کہ وہ اگلے انتخابات میں جسے چاہیں منتخب کریں۔گورنر پنجاب نے اپنے خطاب میں کہا کہ یہ سوال توجہ طلب ہے کہ ملک کی تاریخ میں کسی نے بھوک ،افلاس اور غربت کے خاتمے کے لئے دھرنا کیوں نہیں دیا۔ گو رنر پنجاب نے کہا کہ یہ ہم سب کا قومی فریضہ ہے کہ ذاتی ایجنڈے کو قومی ایجنڈے پر ترجیح نہ دیں۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے دور میں موٹر ویز کے وسیع نیٹ ورک کی تعمیر ، لوڈ شیڈنگ پر قابو پانے کے لئے نئے بجلی گھروں کے قیام کے منصوبے اور بہتر اور پرکشش سرمایہ کاری کے مواقع کے باعث ملک تیزی سے ترقی کی طرف گامزن ہے جس سے فلاحی و رفاحی مملکت کے قیام کی طرف سفر تیزی سے جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف کی قیادت میںآپریشن ضرب عضب کے نتیجہ میں اجتماعی دانش کو بروئے کار لاتے ہوئے تمام سٹیک ہولڈرز کی باہمی مشاورت سے امن ومان کی صورتحال انتہائی حد تک قابل اطمینان بنائی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس ماحول میں سی پیک جیسا انقلابی منصوبہ جو پوری قوم اور خطہ کے لئے گیم چینجر کی حیثیت رکھتا ہے ۔گورنر پنجاب نے اپنے خطاب میں کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں کے لئے پارٹی ورکرز ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ سیاسی پارٹیاں پارٹی ورکروں کی عظیم کمٹمنٹ اور وفاداری کے سہارے پروان چڑھتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بعض عناصر کی جانب سے پھیلائے جانے والے منفی پراپیگنڈے کے خاتمہ کے لئے پارٹی کارکنان ہراول دستے کا کردار ادا کریں۔گورنر پنجاب نے کہا کہ تمام ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز میں پنجاب پبلک سروس کمیشن کے دفاتر قائم کر دیئے گئے ہیں تاکہ نوجوانوں کو روزگار کے حصول کے لئے مشکلات کا سامنا نہ ہو۔قبل ازیں صوبائی وزیر امداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ نے اپنے خطاب میں کہا کہ جنوبی پنجاب کے نوجوانوں کو ملازمت کے مواقع فراہم کرنے کے لئے پبلک سروس کمیشن میں کوٹہ مختص کیا جائے۔ تقریب سے اراکین اسمبلی مخدوم سید علی حسن گیلانی، بیگم پروین مسعود بھٹی، فوزیہ ایوب قریشی، حسینہ ناز،تابش الوری،بلال بلوچ،محمد اکمل بھٹی،ملک طارق، ساجد کھوکھراورچوہدری ذیشان نے بھی خطاب کیا۔ دریں اثناء گورنرپنجاب محمد رفیق رجوانہ نے کہا ہے کہ بہاول پور انڈسٹریل اسٹیٹ کے قیام کے لئے اراضی کی فراہمی کے لئے ٹھوس اور موثر اقدامات عمل میں لائے جائیں گے اور اس پبلک ویلفیئر پراجیکٹ کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کیا جائے گا کیونکہ زراعت کی طرح اب کاروباری طبقہ بھی معاشی طور پر ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔یہ بات انہوں نے بہاول پور چیمبر آف کامرس کے وفد سے ملاقات کے دوران کہی۔اس موقع پر صدر چیمبر آف کامرس چوہدری سلیم حسین،چوہدری محمود مجید،ڈاکٹر رانا محمد طارق،چوہدری محمد وحید،ڈاکٹر شیخ محمد اسلم،چوہدری عبد الجبار،عدیل ارشد بھٹی اور دیگر اراکین چیمبر آف کامرس موجود تھے۔بہاول پور چیمبر آف کامرس کے وفد سے ملاقات کے دوران گورنرپنجاب کو انڈسٹریل سٹیٹ کے حوالہ سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ قبل ازیں گورنر پنجاب محمدرفیق رجوانہ نے 24اکتوبر کو بہاول پور کا ایک روزہ دورہ کیا۔ سرکٹ ہاؤس بہاول پور آمد پر کمشنر بہاول پور ڈویژن کیپٹن(ر)ثاقب ظفر کی قیادت میں ڈویژنل وضلعی حکام نے ان کا خیر مقدم کیا۔ اس موقع پر ریجنل پولیس آفیسر بہاول پور محمد ادریس احمد، ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن آفیسر بہاول پور ڈاکٹر احتشام انور مہار اور ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر بہاول پور اشفاق احمد خان بھی موجود تھے۔ میلسی سے نامہ نگار کے مطابق حکومت اور سیکیورٹی ادارے پر امن اور مستحکم پاکستان کے لئے کوشاں ہیں۔ سیکیورٹی اداروں کے جوانوں کی قربانیوں کی بدولت آ ج ملک تر قی کی منازل طے کر رہا ہے۔ ان خیالا ت کا اظہار گورنر پنجاب ملک رفیق رجوانہ نے تحصیل جنرل سیکرٹری مسلم لیگ (ن) میلسی چوہدری غیور اسلم کی قیادت میں ملنے والے سٹی صدر یوتھ ونگ رانا حفیظ طاہر، ممبر صوبائی کونسل وقار احمد ملتانی،، ممبر صوبائی کونسل ثاقب شہزاد گجر اور شیخ ندیم احمد پر مشتمل وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔تعلیم اور صحت پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے ۔ جنوبی پنجاب کی عوام کو درپیش انتظامی امور کے مسائل کے خاتمے کے لئے سیکرٹریٹ کے قیام جیسے منصوبے پر کام جاری ہے۔

رفیق رجوانہ

ملتان ( سپیشل رپورٹر ) گورنر پنجاب ملک رفیق رجوانہ نے کہا ہے کہ ساری سیاسی جماعتیں محب وطن ہیں لیکن شہروں کو بند کر نا درست اقدام نہیں ایسے ملکی حالات پر چین کو بھی تشویش لاحق ہے اس لیے چینی سفیر بھی سیاسی جماعت کے لیڈر سے ملے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے دورہ ملتان کے موقع پر مسلم لیگ (بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

(ن) کے سابق صوبائی وزیر چوہدری عبدالوحید آرائیں کی جانب سے دیے گئے عصرانے میں شریک یو سی چیئرمینوں ، وائس چیئرمینوں ،کونسلرز اور معززین شہر سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ احتجاج کرنا اپوزیشن کا حق ہے اور آزادی ایسی ہو کہ جس سے کسی اور کی آزادی پر حرف نہ آئے کسی شہر کو بند کرنے سے اگر ترقی ہوتی ہے تو وہ ضرور شہر بند کر دیں لیکن موجودہ حالات میں ایسے فیصلے درست نہیں انہوں نے کہا کہ ساری سیاسی جماعتیں محب وطن ہیں لیکن حب الوطنی کا ایسا مظاہرہ درست نہیں ملکی حالات پر چین کو بھی تشویش لاحق ہے اس لیے چینی سفیر بھی سیاسی جماعت کے لیڈر سے ملے ہیں گورنر پنجاب نے کہا کہ میں یہ نہیں کہتا کہ ن لیگ کی حکومت آنے کے بعد ملک میں دودھ کی نہریں بہہ رہی ہیں لیکن یہ بھی سچ ہے کہ تعلیم ،صحت ،صاف پانی بہترین سفری سہولیات ،بجلی کی فراہمی اور دیگر ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے ،سی پیک جیسا منصوبہ بھی رواں ہے ۔ملتان میں بھی کئی ترقیاتی منصوبے اپنی تکمیل پا چکے ہیں جبکہ دیگر زیر تکمیل ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن میں اختلافات جمہوریت کا حسن ہے گزشتہ روز میں نے جامعہ خیرالمدارس میں عامر سعید انصاری ،سعید انصاری اور رانا شاہد الحسن اور سابق صوبائی وزیر چوہدری وحید ارائیں کے درمیان مصافحہ کرادیا جس کے بعد میرے کہنے پر چوہدری وحید نے انھیں آج کے فنکشن میں آنے کی دعوت دی آج سب یہاں اکھٹے ہیں آج ان میں کوئی اختلاف نہیں ہے اور نہ ہی مسلم لیگ ن کا کوئی دوسرا گروپ ہے انھوں نے کہا کہ میرا کوئی خاص گروپ نہیں ہے بلکہ میرا تعلق مسلم لیگ ن سے ہے ۔ ملتان کے میئر کے حوالے سے بات کرتے ہوئے گورنر رفیق رجوانہ کا کہنا تھا کہ ملتان کے مفاد میں جو بھی بہتر ہو گااور اعلی قیادت جو فیصلہ کرے گی اسی کو ملتان کا میئر بنایا جائے گا ۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سابق صوبائی وزیر چوہدری عبدالوحید ارائیں نے کہا کہ آج مخالفین آکر ہمارا جلسہ دیکھ لیں ہمارے پاس 43چیئر مین موجود ہیں ان کے ہمراہ وائس چیئر مین کی موجودگی ہمارے لئے اظہار اعتماد ہے انھوں نے کہا کہ ہم نے گورنر کے کہنے پر رانا شاہد الحسن ،عامر سعید انصاری اور سعید انصاری کو بلالیا ہے اب قیادت نے اکثریت بھی دیکھ لی ہے فیصلہ اعلی قیادت کا ہوگا وہ جو بھی فیصلہ دے وہ ہمیں قبول ہوگا ۔

گورنر

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...