خونریزی کا خوفناک منصوبہ، دنیا بھر سے ”را“ کے ایجنٹ کراچی پہنچ گئے

خونریزی کا خوفناک منصوبہ، دنیا بھر سے ”را“ کے ایجنٹ کراچی پہنچ گئے
خونریزی کا خوفناک منصوبہ، دنیا بھر سے ”را“ کے ایجنٹ کراچی پہنچ گئے

  

کراچی (ویب ڈیسک) کراچی شہر میں ایک بار پھر خون خرابے اور دہشت کا بازار گرم کرنے کیلئے دبئی، امریکہ، بنکاک، جنوبی افریقہ سے ”را“ کے خطرناک دہشت گرد کراچی پہنچ گئے، جن کا ہدف کراچی آپریشن میں اہم کردار ادا کرنے والے افسروں کو نشانہ بنانا اور شہر میں امن و امان کو تباہ کرنا ہے۔ اس کے علاوہ سکیورٹی اداروں سے لڑنے کی اہم سازش بھی ہے۔

کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملے، 60اہلکار شہید ، 120زخمی

روزنامہ خبریں کے مطابق ”را“ کے سلیپر سیلز کی ٹیم کا سرغنہ آپریشن کمانڈر چیف نبیل بھائی عرف نبیل ٹینشن عرف وارثی بھائی عرف نبیل دادا ہے اور اس گروپ کے ہی تانے بانے صفورا واقعہ سے ملتے ہیں۔ امریکہ اور کینیڈا سے داعش کا اس گروپ سے رابطہ گیم مشینز کے ذریعے رکھا جا رہا تھا اور کروڑوں ڈالرز بھی ان کے اکاﺅنٹ میں منتقل کئے گئے تھے۔ یہ گروپ عام طور پر شناخت چھپانے کیلئے فوٹوشوٹ، ڈانس پارٹیاں، فنکشنز، فیملی پارٹیاں آرگنائز کر کے وہاں میٹنگز کرتے اور پلان بناتے ہیں۔ نبیل جس کے موبائل نمبرز 03350317636 03162425749 یہ ہیں، کی مدد کیلئے امریکہ سے دبئی کے راستے آنے والے احسن عامر کو ساﺅتھ افریقہ ٹیم اور بنکاک ٹیم نے اہم ٹارگٹ دے کر روانہ کیا ہے اور آج کل سکیورٹی اداروں کو جھانسہ دیکر فیملی پروگرام اور ڈانس پارٹیوں کی آڑ میں اسلحہ مطلوبہ جگہوں پر پہنچایا جا رہا ہے ، جس میں پولیس کا اہم افسر ارشد خان اپنی محبوبہ شازیہ قریشی کے ساتھ اس ٹیم کو مکمل سپورٹ کر رہا ہے، اسلحہ کی نقل و حمل سے لے کر دہشت گردوں کے آنے جانے کیلئے مذکورہ ارشد خان ایس ایچ او نے سرکاری گاڑیاں ان کو دی ہوئی ہیں۔ اس کام میں فارن سکیورٹی پر تعینات سلمان شریف اور اس کا بھائی فرحان جو پولیس کے ہیں اور ایم کیو ایم فور کے نارتھ کراچی کو دیکھتے ہیں، وہ ان کو سکیورٹی کے بارے میں باخبر رکھ رہے ہیں جو رپورٹس دہلی میں بیٹھے جاوید لنگڑا تک پہنچائی جارہی ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی تازہ ترین اور دلچسپ خبریں اپنے موبائل اور کمپیوٹر پر براہ راست حاصل کرنے کیلئے یہاں کلک کریں‎

پولیس میں موجود کالی بھیڑوں کو مکمل ”را“ کے سلیپر سیلز چلانے کے لائسنس دیئے ہوئے ہیں جو بھارتی ”را“ کے سلیپر سیلز کو سپورٹ کرنے کے ساتھ مکمل طور پر باخبر رکھ رہے ہیں اور عزیزآباد کے صفہ سکول کے قریب اسلحے کا اہم ذخیرہ نکالنے کی کوشش ہو رہی ہے اور یہ اسلحہ چھوٹے پیکٹس کی صورت میں محفوظ علاقوں میں پہنچایا جا رہا ہے اور یہ کام ارشد خان کی پرائیویٹ کار میں ہو رہا ہے اور اس کارروائی میں بھی ارشد خان اور اس کی محبوبہ مصروف ہیں۔ ان ٹیموں کی مدد کیلئے ملیر سیکٹر کا علی خانزادہ، کورنگی سیکٹر سے کاشف گنجا، ناظم آباد سیکٹر سے معظم ملا، نارتھ سے رحمان کیبل والا شامل ہیں اور یہ شہر میں دہشت گرد ی کی بڑی کارروائی کرنا چاہتے ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ان کی نقل و حرکت بھی مشکوک ہے، مگر پولیس کے اہم افسر اس گھناﺅنے کھیل میں ان کا ساتھ دے رہے ہیں۔ اسلحے کا بڑا ذخیرہ لیاقت آباد میں شاہنواز کے گوداموں میں سکریپ کے روپ میں رکھا ہوا ہے۔ ان کو فوری طور پر روکا نہ گیا تو کراچی کا امن و امان تہس نہس ہو جائے گا۔

مزید : کراچی