رانا ثناءاللہ نے قبضے کی زمین پر ڈیرہ بنالیا

رانا ثناءاللہ نے قبضے کی زمین پر ڈیرہ بنالیا
رانا ثناءاللہ نے قبضے کی زمین پر ڈیرہ بنالیا

  

فیصل آباد (ویب ڈیسک)وزیرِ قانون پنجاب رانا ثناءاللہ کا فیصل آباد میں ایک بڑا غیر قانونی اقدام سامنے آیا ہے، سمن آباد میں ان کا سیاسی ڈیرہ ان کی ملکیتی جگہ پر ہے یا قابض شدہ سرکاری اراضی پر اس حوالے سے بڑی ہی پیچیدہ صورتحال سامنے آئی ہے، وزیر موصوف تو دعویدار ہیں کہ انہوں نے یہ اراضی 1994ءمیں خرید کر رجسٹر کروائی جبکہ محکمہ ہائوسنگ کے ریکارڈ میں ڈیرے والی جگہ سمن آباد کالونی میں شامل ہی نہیں ہے۔

عمران خان نے الطاف حسین کا خلاءپر کردیا: ڈاکٹر عبدالقدیر خان

تفصیلات کے مطابق کہنے کو تو یہ اراضی ہے محکمہ انہار کی جن کے تھے یہاں پر تھے نہر رکھ برانچ کے ساتھ دو کھال لیکن جناب اب یہاں پر کھال نہیں بلکہ وزیر قانون صاحب کا سیاسی ڈیرہ ہے جہاں پر وہ بیٹھ کر حکومتی و سیاسی امور انجام دیتے ہیں۔ کسی زمانے میں پہلے یہاں پر ایک مشروب ساز کمپنی کے مالکان نے سیکورٹی گارڈز کے لیے چھوٹا سا کمرہ بنایا، 90ءکی دہائی میں رانا ثناءاللہ نے سیاسی ڈیرہ بنا کر اطراف سے مزید جگہ بیچ میں شامل کرلی، وزیر موصوف کا کہنا ہے کہ انہوں نے تو جگہ خریدی تھی جس کی ان کے پاس رجسٹری بھی موجود ہے، مگر اصرار کے باوجود رانا ثناءاللہ رجسٹری دکھا نا سکے۔

مزید : فیصل آباد