ابوظہبی ٹیسٹ: یاسر شاہ نے کالی آندھی کو چکرا دیا، پاکستان کی 133 رنز سے فتح، سیریز میں 0-2 کی فیصلہ کن برتری

ابوظہبی ٹیسٹ: یاسر شاہ نے کالی آندھی کو چکرا دیا، پاکستان کی 133 رنز سے فتح، ...
ابوظہبی ٹیسٹ: یاسر شاہ نے کالی آندھی کو چکرا دیا، پاکستان کی 133 رنز سے فتح، سیریز میں 0-2 کی فیصلہ کن برتری

  

ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان نے ویسٹ انڈیز کو دوسرے ٹیسٹ میچ میں 133 رنز سے شکست دے کر تین میچوں کی سیریز میں 0-2 کی فیصلہ کن برتری حاصل کر لی ہے۔ پاکستان 456 رنز کے ہدف کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم 322 رنز بنا کر آﺅٹ ہو گئی۔ کھیل کے آخری روز لیگ سپنر یاسر شاہ چھائے رہے جنہوں نے 6 میں سے 4 کھلاڑیوں کو آﺅٹ کیا جبکہ 2 وکٹیں ذوالفقار بابر کے حصے میں آئیں۔

دوسرا ٹیسٹ ،چوتھے روز کا کھیل ختم،ویسٹ انڈیز نے 456رنز کے ہدف کے تعاب میں چار وکٹوں کے نقصان پر 171رنز جوڑ لیے

تفصیلات کے مطابق شیخ زید سٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ کے آخری روز ویسٹ انڈیز نے اپنی دوسری اننگز کا آغاز 171 رنز 4 کھلاڑی آﺅٹ سے کیا تو ان کے ارادے خطرناک نظر آئے تاہم لیگ سپنر یاسر شاہ نے ویسٹ انڈیز کے بلے بازوں کو چکرا کر رکھ دیا اور پہلے ہی سیشن میں 3 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھا کر میچ پر گرفت مضبوط کر لی جس کے بعد ٹیل اینڈرز بھی ہمت ہارے گئے اور جلد ہی گھٹنے ٹیک دئیے۔ یاسر شاہ نے صرف آخری روز ویسٹ انڈیز کے آﺅٹ ہونے والے 6 کھلاڑیوں میں سے 4 کو آﺅٹ کیا اور میچ میں مجموعی طور پر 10 وکٹیں حاصل کیں۔

چٹاگانگ ٹیسٹ: بنگلہ دیش کا تاریخ رقم کرنے کا خواب چکنا چور، انگلینڈ نے انتہائی سنسنی خیز مقابلہ 22 رنز سے جیت لیا

ویسٹ انڈیز کی جانب سے جرمین بلیک ووڈ 95 رنز بنا کر نمایاں بلے باز رہے جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں کریگ بریتھ ویٹ نے 67، لیون جانسن نے 9، ڈیرن براوو نے 13، مارلون سیمیولز نے 23، روسٹن چیس نے 20، شئی ہوپ نے 41، جیسن ہولڈر نے 16، دیویندرا بیشو نے 26 اور شینن گیبریل نے 7 رنز بنائے جبکہ میگوئل کومنز کوئی سکوربنائے بغیر ہی آﺅٹ ہوئے۔

پاکستان کی جانب سے یاسر شاہ نے 6، ذوالفقار بابر نے 2 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی جبکہ راحت علی اور محمد نواز نے ایک، ایک وکٹ حاصل کی۔

قبل ازیں میچ کے چوتھے روز پاکستان نے دوسری اننگز 227 رنز 2 کھلاڑی آوٹ پر ڈکلیئر کر کے ویسٹ انڈیز کو جیت کیلئے 456 رنز کا ہدف دیا۔ پاکستان کی جانب سے سمیع اسلم نے 50 اور اظہر علی نے 79 رنز بنائے جبکہ اسد شفیق نے 58 اور یونس خان 29 رنز بنا کر ناٹ آوٹ رہے۔ ویسٹ انڈیز کی جانب سے گیبرییل اور کیومنز نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

ابوظہبی کے میدان میں یونس خان اور مصباح الحق کے بعد راحت علی نے بھی ریکارڈ قائم کر دیا

ویسٹ انڈیز کی ٹیم پہلی اننگز میں پاکستان کے 452 رنز کے جواب میں صرف 224 بنا کر فالو آن کا شکار ہو گئی تھی۔ میچ کے تیسرے روز ویسٹ انڈیز نے 106 سکور 4 کھلاڑی آوٹ سے اننگز کا آغاز کیا تو پاکستانی باولرز نے نپی تلی باولنگ کرتے ہوئے بلے بازوں کو ’ہلنے‘ بھی نہ دیا اور ابتدائی سیشن میں ہی مزید 2 کامیابیاں حاصل کر کے فالو آن کی تلوار لٹکا دی۔ ویسٹ انڈیز کو فالو آن سے بچنے کیلئے 252 رنز بنانا تھے لیکن یاسر شاہ اور راحت علی کی تباہ کن باولنگ کے باعث ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم محض 224 رنز ہی بنا سکی۔

پاکستان نے مخالف ٹیم کو فالو آن کرانے کے بجائے خود بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا اور 2 وکٹوں کے نقصان پر 227 رنز بنا کر اننگز ڈکلیئر کر دی اور ویسٹ انڈیز کو جیت کیلئے 456 رنز کا ہدف دیا۔

مزید : کھیل