پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لڑکی کی لاش برآمد ’’عائشہ فرقان داخلے کیلئے ٹرائل دینے آئی تھی‘‘ : پولیس

پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لڑکی کی لاش برآمد ’’عائشہ فرقان داخلے کیلئے ...
پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لڑکی کی لاش برآمد ’’عائشہ فرقان داخلے کیلئے ٹرائل دینے آئی تھی‘‘ : پولیس

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک ) پنجاب یونیورسٹی کے گرلز ہاسٹل سے لڑکی کی لاش برآمد ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل نمبر 5سے عائشہ نامی لڑکی کی لاش ملی ہے جس نے مبینہ طور پر خودکشی کی ہے ۔

آئندہ 48 گھنٹوں کے دوران کس کس علاقے میں بارش ہو سکتی ہے ، خبر جاننے کیلئے یہاں کلک کریں

پولیس کا کہنا ہے کہ 22سالہ عائشہ اٹک کی رہائشی تھی جو سپورٹس کی بنیاد پر پنجاب یونیورسٹی میں داخلے کیلئے ٹرائل دینے آئی تھی تاہم ابتدائی تفتیش کے دوران معلوم ہوتا ہے کہ لڑکی نے گلے میں پھندا ڈال کر خودکشی کی ہے ۔

پولیس حکام کا مزید کہنا ہے کہ عائشہ فرقان پنجاب یونیورسٹی کے ہاسٹل نمبر پانچ میں اپنی کزن کیساتھ رہائش پزیر تھی جو اٹک سے یونیورسٹی میں داخلے کیلئے کرکٹ کے ٹرائل دینے آئی تھی تاہم پولیس نے لاش قبضے میں لیکر تمام حوالوں سے تفتیش شروع کر دی ہے ۔

مزید : لاہور