کوئٹہ پولیس ٹریننگ سینٹر میں شہید ہونے والے اہلکاروں کے نام سامنے آگئے

کوئٹہ پولیس ٹریننگ سینٹر میں شہید ہونے والے اہلکاروں کے نام سامنے آگئے
کوئٹہ پولیس ٹریننگ سینٹر میں شہید ہونے والے اہلکاروں کے نام سامنے آگئے

  

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ رات کوئٹہ کے سریاب پولیس ٹریننگ سینٹر میں شہید ہونے والے زیر تربیت پولیس اہلکاروں کے نام سامنے آگئے ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس ٹریننگ سینٹر میں تین دہشتگردوں کے خودکش حملوں کے نتیجے میں پاک فوج کے کیپٹن روح اللہ سمیت اکسٹھ اہلکاروں کے نام جاری کر دیے گئے ہیں۔ دہشت گردی کے اس خولناک واقعے میں تربت سے تعلق رکھنے والے زیر تربیت بیس اہلکار شامل ہیں جن میں آصف محمود ،زبیر احمد،آصف حسین، مراد ، اسماعیل، سرتاج ، محمود ، وسیم جواد ، گلزار ، عبدالحاکم ، محمد یوسف ، شعیب ، شاہد حسین ، طارق ، ماجد علی ، آصف حیات، چاکر علی ، شعیب ، فردوس، سرتاج غنی کے نام سامنے آئے ہیں ۔

کوئٹہ میں پولیس ٹریننگ سینٹر پر خودکش حملے، 61اہلکار شہید ، 120زخمی

اسی طرح پنجگور سے تعلق رکھنے والے پولیس اہلکاروں میں محمد نور ، عبدالواحد ،ماجد علی ، اشفاق ، نوید احمد،شاہد حسین ،امین اللہ ،لیاقت علی ،محبوب،ظہیر احمد،جانب علی جبکہ عامر ،محمد عباس ،محمد طیب ،شردالدین ،نصیب اللہ ،محمد نسیم،امداد شامل ہیں ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ لورالائی سے شاہ خالد اور ابرار احمد جبکہ پشین سے محمد یوسف شہید ہوئے ہیں ۔ اس کے علاوہ کوئٹہ سے شہباز ، دلاور جبکہ گوادر سے شکیل ، پسنی سے عبدالقادر ، سبی سے عبدالجبار اور ڈیر ہ بگٹی سے سلار احمد ، حیدر علی ، ہرنائی سے محمد حیات اور خضدار سے اعجاز جبکہ مستونگ سے محب اللہ، لیاوت علی اور امین شامل ہیں تاہم تمام شہید اہلکاروں کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی ہے جس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے بھی شرکت کی تھی ۔

مزید : کوئٹہ