’اب ہم تمہارے لڑاکا طیارے گرائیں گے‘ ترکی کو بڑے مسلمان ملک نے خطرناک دھمکی دے دی

’اب ہم تمہارے لڑاکا طیارے گرائیں گے‘ ترکی کو بڑے مسلمان ملک نے خطرناک دھمکی ...
’اب ہم تمہارے لڑاکا طیارے گرائیں گے‘ ترکی کو بڑے مسلمان ملک نے خطرناک دھمکی دے دی

  

دمشق(مانیٹرنگ ڈیسک)اس وقت شام میں جاری جنگ کی صورتحال پر نظر دوڑائیں تو محسوس ہوتا ہے کہ تیسری عالمی جنگ شروع ہو چکی ہے جو پراکسی ممالک کے ذریعے لڑی جا رہی ہے۔ کچھ عرصہ سے ترکی بھی اس میدان جنگ میں کود چکا ہے اور کردجنگجوﺅں کے ٹھکانوں پر بڑھ چڑھ کر حملے کر رہا ہے کیونکہ وہ کرد باغیوں کو اپنے لیے خطرہ سمجھتا ہے۔ کرد جنگجو چونکہ شامی حکومت کے اتحادی ہیں اس لیے ترکی کی کارروائیوں پر شامی حکومت غصے سے آگ بگولہ ہے۔ اب شامی حکومت نے ترکی کو ایک ایسی دھمکی دے دی ہے جس سے دونوں ملکوں کی براہ راست جنگ کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ شامی وزارت دفاع کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ”اگر اب ترک جنگی طیاروں نے شام کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تو ہم انہیں مار گرائیں گے۔“

امریکہ نے ایسی جگہ اپنی فوجیں پہنچادیں کہ چین غصے سے آگ بگولہ ہوگیا، نیا خطرہ پیدا ہوگیا

مارننگ نیوز یو ایس اے کی رپورٹ کے مطابق شامی وزارت دفاع کے بیان میں یہ بھی بتایا گیا کہ ”ترک فضائیہ کی حالیہ بمباری میں 150عام شہری نشانہ بنے ہیں۔ ترک کے اس طرح کے اقدامات خطے کے استحکام کے لیے خطرہ ثابت ہو رہے ہیں۔ اب اگر ترک فضائیہ ہماری فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتی ہے تو ہم اپنے تمام تر وسائل کو استعمال کرتے ہوئے اس کے شام میں آنے والے طیاروں کو گرا دیں گے۔“ واضح رہے کہ ترک فضائیہ کی حالیہ بمباری سے سے ایک روز قبل شامی صدر بشارالاسد نے اپنے اتحادی روسی ہم منصب ولادی میر پیوٹن سے ٹیلی فون پر گفتگو کی جس میں شام کی موجودہ صورتحال، بالخصوص دہشت گردی کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس کے علاوہ دونوں رہنماﺅں نے اس معاملے پر بھی گفتگو کی کہ شام کی جنگ کو کس طرح ختم کیا جا سکتا ہے۔

مزید : بین الاقوامی