وڈیرے نے خاتون کو تاحیات شادی نہ کرنے کی سزا سنا دی

25 اکتوبر 2017 (22:29)

گھوٹکی(ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈہرکی کے علاقے مصطفی آباد کالونی کی رہائشی خاتون کو طلاق لینے کے جرم میں بااثر وڈیرے نے ساری عمر شادی نہ کرنے کی سزا سنادی ہے۔خاتون انصاف کی تلاش میں در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئی ہے جبکہ اس نے اعلیٰ حکام سے انصاف دلانے کا مطالبہ بھی کردیا ہے۔

کشمیری قیادت مل کر تحریک آزادی کے حوالے سے ریاستی حکومت کا کردار واضح کرے: فاروق حیدر خان

تفصیلات کے مطابق ڈہرکی کے علاقے مصطفی آباد کی رہائشی خاتون فہمیدہ پتافی کو شوہر اعظم پتافی نے آٹھ سال قبل طلاق دے کر معصوم بچے سمیت گھر سے بدخل کردیا تھا۔ خاتون کو انصاف دینے کی بجائے بااثر وڈیرے عبدالغفار نے طلاق لینے کے جرم میں اسے ساری عمر شادی نہ کرنے کی سزا سنادی اس کے ساتھ ساتھ خاتون کو دوسری شادی کرنے کی صورت میں دلہے کے ساتھ کارو کاری کر کے قتل کرنے کا حکم بھی دے دیا ۔

متاثرہ خاتون فہمیدہ پتافی کا کہنا تھا کہ اس کے شوہر اعظم پتافی نے آٹھ سال قبل سخت تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد طلاق دے کر معصوم بچے سمیت گھر سے بے دخل کردیا تھا۔ جس کے بعد آٹھ سال سے وہ تنہاءزندگی گزارنے پر مجبور ہے۔ وہ دوسری شادی کرنا چاہتی ہے لیکن بااثر وڈیرے نے حکم دیا ہے کہ دوسری شادی نہیں کرسکتی اور اگر دوسری شادی کی تو دلہے سمیت کاروکاری کے الزام تلے قتل کردیا جائے گا، خاتون نے اعلیٰ حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزیدخبریں