حکومت کا سندھ ویئرہاؤس ریگیولیٹری اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ

حکومت کا سندھ ویئرہاؤس ریگیولیٹری اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ

  



کراچی(اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت نے صوبے کے سات اضلاع میں سبسڈی پر رائس تھریشر مشین دینے اورسندھ ویئر ہاؤس ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ کرلیاہے۔وزیرزراعت محمد اسماعیل راہو نے محکمہ زراعت کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے مزید کہا کہ سندھ حکومت نے سات اضلاع کے کاشتکاروں سے رائس تھریشر مشین دینے کے لیے درخواستیں طلب کرلی گئی ہیں۔لاڑکانہ ڈویژن کے 5 اضلاع میں رائس تھریشر مشین کاشتکاروں کو دیئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ رائس تھریشر مشین کی قیمت ساڑھے پانچ لاکھ روپے ہے۔50 فیصد کاشتکار اور 50 فیصد سندھ حکومت ادا کرے گی۔ اسماعیل راہو نے کہا کہ سندھ ویئرہاؤس ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام پر 4 سو ملین خرچہ آئے گا، سندھ ویئرہاؤس ریگو لیٹری اتھارٹی کے قیام سے سندھ کے کسانوں کو فائدہ پہنچے گا۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت رواں سال سبسڈی پر تھرپارکر کے کسانون کو پچیس ہزار کھجور کے نئی نسل کے درخت فراہم کرے گی۔ محکمہ زراعت کو صوبے میں 5500 واٹرکورس بنانے ہیں،389 واٹرکورس بناچکے ہیں۔ اسماعیل راہو نے کہا کہ زمین اور پچاس فیصد رقم فارمرزدیں گے۔ پچاس فیصد رقم حکومت ادا کرے گی۔اجلاس میں محکمہ زراعت کے سیکرٹری اور افسران کی شرکت کی صوبائی وزیر کو محکمہ کے جاری وئیر ہاوس سمیت تمام منصوبوں پر بریفنگ بھی دی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر