ہائیکورٹ بنوں بینچ میں جج کی عدم تعیناتی کیخلاف وکلاء کی ہڑتال 

    ہائیکورٹ بنوں بینچ میں جج کی عدم تعیناتی کیخلاف وکلاء کی ہڑتال 

  



بنوں (بیورورپورٹ)ہائی کورٹ بنوں بنچ میں سینئر جج کی عدم تعیناتی کے خلاف ہائی کورٹ بنوں بار ایسوسی ایشن کے وکلاء نے ہڑتال کی اور جنرل باڈی اجلاس منعقد کیا ہڑتال  ضلع لکی مروت،کرک اور بنوں ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن  کے مطالبے پر کیا گیا اجلاس سے پشاور ہائی کورٹ بنوں بار ایسوسی ایشن کے صدر رشید خان دھرمہ خیل،جنرل سیکرٹری اکرام اللہ ایڈوکیٹ،صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن بنوں وسیم خان ایڈوکیٹ،نثار خان ایڈوکیٹ سمیت ضلع بنوں اور ضلع لکی مروت کے ہائی کورٹ ممبران نے خطاب کیا اور مطالبہ کیا کہ ہائی کورٹ بنوں بنچ کیلئے ایسے سینئر جج کو مستقل تعینات کیا جائے جو کہ سول اور کریمنل کیسز میں تجربہ رکھتا ہو اور سینئر جج ہو کیونکہ سینئر جج کی عدم تعیناتی سے مقدمات متاثر ہورہے ہیں اور اس سلسلے میں متعدد بار ہائی کورٹ انتظامیہ کو درخواستیں بھی دی ہیں مگر اس پر کسی قسم کی پیش رفت نہیں ہوسکی ہے اور وکلاء ہڑتال پر مجبور ہوگئے ہیں اجلاس میں ہائی کورٹ بنوں کی نئی بلڈنگ کو فی الفاور قابل استعمال بنانے کا بھی قرارداد کے ذریعے مطالبہ کیا گیا اور مطالبہ کیا کہ نومبر کے پہلے ہفتے میں شفٹ کیا جائے یہ بھی مطالبہ کیا کہ بنوں بنچ کیلئے سینئر جج کی تعیناتی سمیت روزانہ کی بنیاد پر ڈبل بنچ بھی ضروری ہے اور اسسٹنٹ ایڈوکیٹ جنرل اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل کی تعیناتی میں بنوں،لکی اور کرک کے اضلاع کو نظر انداز نہ کیا جائے اورہائی کورٹ بلڈنگ کو جلد نئی عمارت میں شفٹ کیا جائے۔بعض دیگر مسائل کے حل کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر